کرکٹ کی دنیا کا سب سے بڑا ٹاکرا: کچھ دیر بعد

ایشیاء کپ
Loading...

ایشیاء کپ میں سب سے بڑا ٹاکرا آج پاکستان اور بھارت کے درمیان اب سے کچھ دیر بعد ہوگا۔

دبئی انٹرنیشنل اسیٹیڈیم میں دونوں ٹیمیں پاکستانی وقت کے مطابق شام ساڑھے 4 بجے مدمقابل ہوں گی۔

پاک بھارت میچ کے لیے شائقین کرکٹ بے تاب ہیں اور دونوں ٹیموں کے درمیان اچھے مقابلے کی توقع ہے۔ میچ کے ٹکٹس پہلے ہی فروخت ہوچکے ہیں اور گراؤنڈ شائقین سے کھچا کھچ بھرا ہوگا۔

بھارت کے خلاف آج کے میچ کے لیے ممکنہ قومی ٹیم فخر زمان، امام الحق، بابر اعظم، شعیب ملک، کپتان سرفراز احمد، آصف علی، فہیم اشرف، شاداب خان، حسن علی، محمد عامر اور عثمان خان شنواری پر مشتمل ہوگی۔

Loading...

بھارتی ٹیم کپتان روہت شرما، شیکر دھاون، امباتی روئیڈو، دنیش کارتھک، مہندرا سنگھ دھونی، بھونیشور کمار، شاردل ٹھاکر، کلدیپ یادیو، خلیل احمد اور یزویندرا چاہل پر مشتمل ہوسکتی ہے۔

چیمپئنز ٹرافی کے بعد دونوں ٹیمیں آج پہلی مرتبہ مدمقابل ہوں گی۔ اس وقت بھارتی ٹیم کی قیادت کرنے والے ویرات کوہلی ٹیم کا حصہ نہیں تاہم ان کی غیر موجودگی میں روہت شرما قیادت کے فرائض انجام دیں گے۔

 قومی ٹیم میں فخر زمان، بابراعظم اور شعیب ملک پر مشتمل ٹاپ آرڈر بیٹنگ لائن موجود ہے جب کہ بولنگ کے شعبے میں محمد عامر، حسن علی اور شاداب خان پاکستانی ٹیم کے اہم ہتھیار ہوں گے۔

ادھر ایشیاء کپ کی شیڈولنگ پر معترض قومی کپتان سرفراز احمد نے آج بھارت کیخلاف نارمل کرکٹ پر اصرار کرتے ہوئے کہا ہے کہ انہوں نے ساتھی کھلاڑیوں کو یہ بات سمجھا دی ہے کہ وہ اس میچ میں بھی اسی طرح کھیلیں جیسے عام طور پر کھیلتے ہیں، شائقین کی خواہش ہر حال میں فتح سہی لیکن بطور کپتان ہر ٹیم کیخلاف کامیابی اہمیت کی حامل ہوتی ہے، پاکستان کو اضافی فائدہ حاصل نہیں کیونکہ کنڈیشنز تمام ٹیموں کیلئے یکساں طور پر سازگار ہیں، ایک ٹیم کو دبئی تک محدود رکھنا سمجھ سے بالاتر ہے، یقینی طور پر پی سی بی حکام اس معاملے کو دیکھیں گے۔

(Visited 28 times, 1 visits today)
Loading...
Advertisements

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں