!.دنیا کا ایک عظیم شاہکار۔۔

loading...

عظیم حسین:

پاکستان کے دارلحکومت اسلام آباد سے ایک سو میل جنوب کی جانب واقع یہ دنیا کا عظیم اور حیرت انگیز عجوبہ “کھیوڑہ نمک کی کان” 322 ق م میں دریافت ہوئی، جس کی کہانی کُچھ یوں ہے کہ جب سکندرِ اعظم اس علاقے میں آیا تو اس کے گھوڑے اِن پتھروں کو چاٹتے ہوئے دیکھے گئے۔ ایک فوجی نے اُن پتھروں کو چاٹا تو اُس نے اُنہیں نمکین پایا۔ اِس طرح یہ نمک کی کان دریافت ہوئی جس کے بعد وہاں کے مقامی راجہ نے یہ کان خرید لی۔ یاد رہے کہ یہ دنیا کی دوسری بڑی نمک کی کان ہے اور یہ زیرِ زمین 110 مربع کلومیٹر رقبے پر پھیلی ہوئی ہے۔ اس میں 19 منزلیں بنائی گئیں ہیں جن میں سے 11 منزلیں زیرِ زمین ہیں۔ اس کان میں سے سالانہ 32500 ٹن نمک حاصل کیا جاسکتا ہے۔ حیرت انگیز بات یہ ہے کہ کان میں ایک کلینک بھی قائم کیا گیا ہے جہاں دمے کے مریضوں کا علاج ہوتا ہے، اور وہ مریض نہ صرف پاکستان سے تعلق رکھتے ہیں بلکہ بیرونِ ملک سے بھی لوگ علاج کے لیے یہاں آتے ہیں۔ ماہرین کا کہنا ہے کہ یہاں سے نکلے والی لہریں نہ صرف دمے کا علاج کرتی ہیں بلکہ آج کل کی ٹیکنولوجی مثلاً کمپیوٹر، موبائل سے ہونے والی تھکن کو بھی دور کرتی ہیں۔

Comments

comments

مزید پڑھیں۔  23rd July 2018 - آج کا کارٹون

!.دنیا کا ایک عظیم شاہکار۔۔” ایک تبصرہ

اپنا تبصرہ بھیجیں