ایشیاء کپ: ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی پر حسن علی، اصغر افغان اور راشد خان کو جرمانہ

ضابطہ اخلاق
Loading...

آئی سی سی نے ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی پر پاکستانی باؤلر حسن علی، افغانستان کرکٹ ٹیم کے کپتان اصغر افغان اور کھلاڑی راشد خان پر میچ فیس کا 15 فیصد جرمانہ عائد کردیا۔

آئی سی سی کی جانب سے جاری کردہ بیان کے مطابق ابوظہبی میں ایشیاء کپ کے سپر فور مرحلے میں پاکستان اور افغانستان کے میچ کے درمیان ضابطہ اخلاق کے درجہ بندی اول کی خلاف ورزی پر تینوں کھلاڑیوں کے ایک، ایک منفی پوائنٹس بھی دیے۔

ادارے کی جانب سے بتایا گیا کہ حسن علی اور اصغر کھلاڑیوں کے لیے بنائے گئے ضابطہ اخلاق کے آرٹیکل 2.1.1 کی خلاف ورزی کرتے پائے گئے جبکہ راشد خان نے آرٹیکل 2.1.7 کی خلاف ورزی کی۔

خیال رہے کہ آرٹیکل 2.1.1 میں ‘ کھیل کی روح کی خلاف ورزی’ کرنے جبکہ آرٹیکل 2.1.7 میں ‘ نامناسب زبان، رویے یا اشاروں’ کے خلاف استعمال ہوتا ہے۔

آئی سی سی کے بیان کے مطابق افغانستان کی اننگ کے 33 ویں اوور میں پاکستانی باؤلر حسن علی نے بلے باز حشمت اللہ شاہدی کو گیند پھینک کر ڈرانے کی کوشش کی جو ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی ہے۔

Loading...

اسی طرح ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی کرتے ہوئے افغانستان کے کپتان اصغر نے 37 ویں اوور میں رنز بناتے وقت حسن علی کو کندھا مارا جبکہ پاکستان کی اننگ کے 47 ویں اوور میں راشد خان نے بلے باز آصف علی کو آؤٹ کرکے انگلی سے واپس جانے کا اشارہ کیا۔ آئی سی سی کے مطابق باؤلر کا یہ ردعمل بلے باز کے جارحانہ رویہ کو بڑھا سکتا تھا۔

میچ کے دوران پیش آنے والے واقعات پر فیلڈ امپائر انیل چوہدری اور شوان جیورج، تھرڈ امپائر روڈ ٹکر اور فورتھ امپائر انیس الرحمٰن نے ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی کو رپورٹ کیا۔

بعدازاں تینوں کھلاڑیوں نے اپنی غلطی کو تسلیم کیا جس کے بعد آئی سی سی میچ ریفریز کے امریٹس الیٹ پینل کے رکن اینڈی پےکروفٹ نے ان پر میچ فیس کا 15 فیصد جرمانہ اور ایک، ایک منفی پوائنٹ دیا۔

واضح رہے کہ پاکستانی کھلاڑی حسن علی اور افغان کھلاڑی راشد خان کو پہلی مرتبہ پوائنٹس میں تنزلی کا سامنا کرنا پڑا جبکہ افغان کپتان اصغر کو 2 سال کے دوران دوسری مرتبہ منفی پوائنٹس کا سامنا کرنا پڑا۔ اس سے قبل افغان کپتان اصغر کو زمبابوے کے خلاف ایک روزہ میچ میں امپائر کے فیصلے کے خلاف نازیبا رویہ اپنانے پر 2 منفی پوائنٹس کا سامنا کرنا پڑا تھا۔

(Visited 42 times, 1 visits today)
Loading...
Advertisements

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں