امن کی خواہش کو کمزوری نہ سمجھا جائے، میجر جنرل آصف غفور

میجر جنرل آصف غفور

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ کے ڈائریکٹر جنرل میجر جعرل آصف غفور نے ایک بیان میں کہا ہے کہ بھارتی آرمی چیف کا بیان غیر ذمہ دارانہ ہے، امن چاہتے ہیں لیکن امن کی خواہش کو کمزوری نہ سمجھا جائے اور جنگ اس وقت ہوتی ہے جب کوئی جنگ کے لیے تیار نہ ہو، ہم جنگ کے لیے تیار ہیں۔
انہوں نے مزید کہا کہ کہ مقبوضہ کشمیر میں آزادی کی تحریک چل رہی ہے اور تیسری نسل ہے جو قربانیاں دے رہی ہے۔
“حکومت پاکستان کی آج بھی پیش کش ہے کہ آپ آئیں اور ٹیبل پر بیٹھ کر بات کریں۔”
ڈی جی آئی ایس پی آر کا کہنا ہے کہ جنگ اس وقت ہوتی ہے جب کوئی جنگ کے لیے تیار نہ ہو، پاکستان ایٹمی قوت اور ہم جنگ کے لیے تیار ہیں۔
ترجمان پاک فوج کا کہنا ہے کہ ہم امن چاہتے ہیں لیکن امن کی خواہش کو کمزوری نہ سمجھا جائے، ہم امن کو خراب نہیں ہونے دیں گے۔
انہوں نے کہا کہ پاکستان کو دہشت گردی کا شکار بنایا گیا لیکن پاکستان نے کامیابی کے ساتھ دہشت گردی کا مقابلہ کیا۔
ان کا کہنا ہے کہ پاکستان نے گزشتہ دو دہائیوں میں امن قائم کیا، ہمیں پتا ہے کہ امن پسندی کی کیا قیمت ہے اور ہم امن پسندی کو آگے لے کر چلنا چاہتے ہیں۔
ڈی جی آئی ایس پی آر کا کہنا تھا کہ بھارتی حکومت کو کرپشن کے الزامات پر تنقید کا سامنا ہے لیکن بھارتی حکومت نےحالات کا رخ موڑنے کے لیے پاکستان دشمنی کا بیانیہ اپنایا ہے۔
ترجمان پاک فوج کے مطابق جو کہتے تھے کشمیر میں عسکریت پسندی ہے وہ سیاسی تحریک ہے جسے وہ دبا نہیں پارہے ہیں جب کہ بھارت میں آزادی کی تحریکیں چل رہی ہیں۔
انہوں نے کہا کہ بھارتی آرمی چیف کا بیان غیر ذمے دارانہ ہے، ری الائنمنٹ ہورہی ہے اور بہت سے ملکوں سے ہمارے تعلقات بہتری کی طرف جارہے ہیں۔

(Visited 11 times, 1 visits today)

Comments

comments

#hypocriteModi, DGISPR, ISPR,

اپنا تبصرہ بھیجیں