مریم نوازکی التجا رد کردی گئی

مریم نواز

راولپنڈی: سابق وزیراعظم نواز شریف کی بیٹی مریم نواز نے جیل میں قیدیوں کو پڑھانے کی خواہش کا اظہار کیا تھا جس کو رد کر دیا گیا۔

مریم نواز کی اس درخواست کو مسترد کر دیا گیا کیونکہ ان کو جیل میں اکیلا رکھا گیا ہے اور وہ اکیلے ہونے کی وجہ سے دوسرے قیدیوں سے تعلق نہیں رکھ سکتی۔

جبکہ نواز شریف اور ان کی بیٹی کو کچھ دن پہلے ملنے کی اجازت دی گئی تھی۔

یہ بھی اطلاع ملی ہے کہ نواز شریف کے داماد کیپٹن (ریٹائرڈ) صفدر جیل میں اکیلے نہیں ہیں بلکہ وہ سابق ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اور سیشن جج راجہ خرم علی خان کے ساتھ جیل میں ہیں جو اپنی بیوی کے ساتھ  گھریلو ملازمہ پر تشدد کے کیس میں مجرم ٹھہرے تھے۔

21 جولائی کو عوام دماغی انتشار میں مبتلا ہو گئے جب مریم نواز نے جیل جانے کے بعد پہلی بار  ٹویٹ کیا اور اپنے ٹویٹر اکاؤنٹ کی تصدیق کی۔

کورٹ  نے 6 جولائی کو  ایون فیلڈ کیس میں نواز شریف کو 10 سال قید کی سزا سنائی تھی۔یہ کیس نیب میں سرانجام پایا۔

ان کی بیٹی مریم نواز کو سات سال اور ان کے شوہر کیپٹن (ریٹائرڈ)صفدر کو  1 سال قید کی سزا سنائی گئی۔

کیپٹن (ریٹائرڈ)صفدر کو اتوار  8 جولائی کو جبکہ مریم نواز اور نواز شریف کو جمعہ 13 جولائی کو وطن واپس آنے پر گرفتار کیا گیا۔

loading...

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں