جانیےجی میل کانفیڈنشنل موڈ موبائل فون پر کیسے استعمال کیا جاسکتا ہے؟

گوگل

گوگل نے اسی سال اپریل میں ای میل سروس جی میل کو ری ڈیزائن کیا تھا، جس میں متعدد نئے فیچرز کا اضافہ بھی ہوا تاہم سب سے زیادہ اہم’کانفیڈنشنل موڈ’ تھا جس کے تحت ایسی ای میلز کو بھیجا جاسکتا ہے جو مخصوص وقت کے بعد خودکار طور پر ختم ہوجائیں گی۔

ڈیسک ٹاپ صارفین کے لیے تو یہ فیچر مئی سے ہی دستیاب ہے مگر اب اسے اسمارٹ فونز صارفین کے لیے پیش کیا جارہا ہے۔

بنیادی طور پر پرائیویسی کو بہتر بنانے کے لیے متعارف کرائے گئے اس فیچر کے تحت ای میلز کی ایکسپائر ڈیٹ ہوگی، بالکل اسنیپ چیٹ کے خود ختم ہونے والے پیغامات کی طرح۔

اسی طرح اس فیچر کی مدد سے لوگ ایسی ای میلز بھی بھیج سکتے ہیں جسے دیگر افراد فارورڈ، کاپی، پیسٹ یا ڈاﺅن لوڈ بلکہ پرنٹ تک نہیں کرسکیں گے، تاہم فی الحال کے پاس اسکرین شاٹ کا کوئی علاج نہیں، مگر مستقبل میں اس کی روک تھام کا وعدہ بھی کیا ہے۔

گوگل نے رواں سال اپریل میں اپنی ای میل سروس جی میل کو ری ڈیزائن کیا تھا، جس میں متعدد نئے فیچرز کا اضافہ بھی ہوا تاہم سب سے زیادہ اہم’کانفیڈنشنل موڈ’ تھا جس کے تحت ایسی ای میلز کو بھیجا جاسکتا ہے جو مخصوص وقت کے بعد خودکار طور پر ختم ہوجائیں گی۔

ڈیسک ٹاپ صارفین کے لیے تو یہ فیچر مئی سے ہی دستیاب ہے مگر اب اسے اسمارٹ فونز صارفین کے لیے پیش کیا جارہا ہے۔

بنیادی طور پر پرائیویسی کو بہتر بنانے کے لیے متعارف کرائے گئے اس فیچر کے تحت ای میلز کی ایکسپائر ڈیٹ ہوگی، بالکل اسنیپ چیٹ کے خود ختم ہونے والے پیغامات کی طرح۔

مزید پڑھیں۔  معروف ریسلردی راک کی تھرلر فلم’’ اسکائی اسکریپر‘‘13جولائی کو تہلکہ مچائے گی

اسی طرح اس فیچر کی مدد سے لوگ ایسی ای میلز بھی بھیج سکتے ہیں جسے دیگر افراد فارورڈ، کاپی، پیسٹ یا ڈاﺅن لوڈ بلکہ پرنٹ تک نہیں کرسکیں گے، تاہم فی الحال کے پاس اسکرین شاٹ کا کوئی علاج نہیں، مگر مستقبل میں اس کی روک تھام کا وعدہ بھی کیا ہے

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں