مائیکل کوہن نے بھری عدالت میں ڈونلڈ ٹرمپ کا بھانڈاپھوڑدیا

ڈونلڈ ٹرمپ

نیویارک :امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے سابق وکیل مائیکل کوہن نے کہا ہے کہ انہوں نے ٹرمپ کے کہنے پر فحش فلموں کی اداکارہ کورقم دی تھی۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ سنگین مشکلات میں گھر گئے ٗایک ہی دن میں دو قریبی شخصیات قانون کی گرفت میں آگئیں۔ صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے سابق وکیل مائیکل کوہن نے اپنے اوپر لگائے تمام الزامات کا اعتراف کیا ہے ان پر ٹیکس چوری، بنک سیجھوٹ بولنے اورانتخابی فنڈ کے غلط استعمال سمیت 8الزامات تھے۔
مائیکل کوہن نے بھری عدالت میں بھانڈاپھوڑدیا کہ ڈونلڈٹرمپ کے کہنے پر انہوں نے فحش فلموں کی اداکارہ کورقم دی تھی۔فحش فلموں کی اداکارہ اسٹورمی ڈینل نے ٹرمپ سے تعلق کا دعویٰ کیا تھا کوہن نے بتایا کہ اسٹورمی ڈینیل سمیت دو خواتین کو چپ رکھنے کیلیے ایک لاکھ تیس ہزار اور ڈیڑھ لاکھ ڈالر دیے جو الیکشن پر اثر انداز ہونا چاہتی تھیں۔
رپورٹس کے مطابق ٹرمپ کے ساتھ طویل عرصہ گزارنے والے مائیکل کوہن کو چارسے پانچ سال قید کی سزا ہوسکتی ہے جس میں نرمی کیلئے وہ روسی مداخلت سے متعلق تعاون پر بھی غور کرسکتے ہیں۔دوسری جانب ٹرمپ کی انتخابی مہم کیسابق انچارج پال مینافورٹ پر مالی بدعنوانیوں کا جرم ثابت ہوگیاہے جس میں ٹیکس فراڈ، بینک فراڈ اور بیرون ملک بینک اکاؤنٹس چھپانے کے جرم شامل ہیں۔
مینافورٹ اور کوہن کو 016 کے الیکشن میں مبینہ روسی مداخلت کی تحقیقات کے نتیجے میں شامل تفتیش کیا گیا تھا۔امریکی صدر نے مینافورٹ کو اچھا آدمی قراردیتے ہوئے ان کو مجرم ٹھہرانے پر افسوس کا اظہار کیا اور اسے اپنے خلاف مہم کا حصہ قرار دیاہے۔صدرٹرمپ نے یہ کہہ کر اپنا دفاع کیا کہ مینافورٹ کے کیس سے یہ ثابت نہیں ہوتا کہ اس میں وہ بھی ملوث ہیں۔
ٹرمپ کو ایک ہی دن میں تیسرا جھٹکا اس وقت لگا جب صدر کیاقتصادی مشیرکے گھرانتہائی دائیں بازو کے لیڈر کو مدعو کیے جانے کا انکشاف ہوا ہے۔ ایک کانفرنس میں پیٹربرملو کیساتھ پینل میں شریک ہونے پر صدر کے تقریر لکھنے والے کو مستعفی ہوناپڑاتھا۔

Comments

comments

مزید پڑھیں۔  حمیمہ ملک نے ہراساں ہونے پر تصاویر شئیر کردی

اپنا تبصرہ بھیجیں