“پاکستان کو امریکا یا چین میں سے کسی ایک کو چننا ہے، یہ تاثر غلط ہے.”شاہ محمود قریشی

شاہ محمود قریشی
Loading...

واشنگٹن: وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا کہنا ہے کہ بھارت کی جانب سے ہٹ دھرمی کا رویہ برقرار رکھنے کے باوجود پاکستان خطے میں امن کی کوششیں جاری رکھے گا۔

واشنگٹن میں پاکستانی سفارت خانے میں ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے اس تاثر کو بھی رد کیا کہ پاکستان دوراہے پر کھڑا ہے جہاں اسے امریکا یا چین میں سے کسی ایک کو چننا ہے۔

شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ پاکستان کی امریکا کے ساتھ دوستانہ تعلقات رکھنے کی کوششوں سے چین کو کوئی مسئلہ نہیں۔
اس کے ساتھ انہوں نے اس بات کا بھی ذکر کیا جس میں پاکستان کی جانب سے بابا گرونانک کی سالانہ تقریبات کے موقع پر سکھ یاتریوں کےلیے کرتارپور بارڈر کھولنے کی پیشکش کی گئی تھی۔

حکومتی پالیسیوں کا دفاع کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ بھارت مذاکرات سے گریزاں ہے لیکن ہم اپنے دروازے بند نہیں کریں گے، انہوں نے مزید کہا کہ مسائل سے آنکھیں پھیر لینے سے وہ ختم نہیں ہوجاتے اسی طرح کشمیر میں صورتحال خودبخود بہتر نہیں ہوجائے گی۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ بھارت نے جولائی کے ایک واقعے کو جواز بنا کرستمبر میں ہامی بھر لینے کے باوجود امن کی کوششوں کو معطل کیا۔

پاکستان کے چین اور امریکا کے ساتھ تعلقات کے حوالے سے پوچھے گئے ایک سوال کے جواب میں وزیر خارجہ کا کہنا تھا کہ پاکستان کے لیے دونوں ممالک سے تعلقات انتہائی اہمیت کے حامل ہیں۔

Loading...

سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات کی سرمایہ کاری کے حوالے سے سوال کا جواب دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ گزشتہ 4 سال سے ملک میں کوئی وزیر خارجہ موجود نہیں تھا جس کے باعث دونوں اتحادیوں کے ساتھ تعلقات میں دشواریوں کا سامنا رہا لیکن اب حکومت نے تعلقات کی بحالی کے سلسلے میں کوششوں کا آغاز کردیا ہے۔

پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے ان کا مزید کہنا تھا کہ انہوں نے میڈیا رپورٹس دیکھی ہیں جس میں کہا جارہا ہے کہ امریکا پاکستان کی سیکیورٹی امداد بحال کرنے پر غور کررہا ہے لیکن جب تک امریکی حکام کی جانب سے براہِ راست تصدیق نہیں ہوجاتی وہ اس بارے میں گفتگو نہیں کریں گے۔

بھارت اور امریکا کے تعلقات پر اظہارِ خیال کرتے ہوئے وزیر خارجہ نے کہا کہ پاکستان بھارت کے ساتھ امریکا کے تعلقات کی نوعیت کو سمجھتا ہے لیکن نئے دوست بنانے کی خوشی میں پرانے دوستوں کو بھلانا نہیں چاہیے۔

ان کا مزید کہنا تھا کہا امریکا کے لیے پاکستان سے تعلقات ہمیشہ سود مند ثابت ہوئے ہیں چاہے وہ سردجنگ کا زمانہ ہو، روس کی افغانستان میں جنگ یا پھر دہشت گردی کے خلاف عالمی جنگ ہو۔

علاوہ ازیں وزیر خارجہ شامہ محمود قریشی نے کشمیری حریت پسند کے ڈاک ٹکٹ کے حوالے سے بھارتی موقف رد کرتے ہوئے کہا کہ کشمیر میں ہزاروں نوجوان برسرِ پیکار ہیں وہ سب کے سب دہشت گرد نہیں۔

(Visited 8 times, 1 visits today)
Loading...
Advertisements

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں