تین سالہ راپی سگریٹ کی عادت میں مبتلا

تین سالہ راپی سگریٹ کی عادت میں لاحق
loading...

تمباکو نوشی کی بری عادت اگرچہ کم عمری میں بھی لاحق ہوسکتی ہے، انڈونیشیا کا تین سالہ بچہ نہ صرف اس قبیح عادت کا شکار ہے بلکہ وہ روزانہ 40 کے قریب سگریٹ پھونک دیتا ہے اور اس کے والدین بے بس ہیں

جکارتا:  تین سالہ بچے راپی نے ماں کے ٹھلے پر بیٹھے بیٹھے سگریٹ کے گرے ہوئے ٹوٹوں کو اٹھا کر تمباکو نوشی کا آغاز کیا۔ پہلے پہل لوگوں نے اس کے لیے سگریٹ سلگائی اور اس کے بعد یہ سلسلہ چلتا رہا۔ اب حال یہ ہے کہ راپی سگریٹ کے بغیر نہیں رہ سکتا اور دن بھر میں 40 کے قریب سگریٹ پی جاتا ہے۔انڈونیشیا کے رہائشی بچے ’راپی پامونگ کاس‘ کی والدہ بازار میں ایک ٹھیلا لگاتی ہیں۔

راپی ابھی صرف تین سال کا ہے اور جب یہ لوگوں سے سگریٹ مانگتا ہے تو لوگ ہنستے اور کچھ اس کو سگریٹ سلگا بھی دیتے۔ راپی کی ماں بہت پریشان ہے  ان کا کہنا ہے کہ جب راپی کو سگریٹ نہیں ملتا تو وہ شور مچاتا ہے اور جھگڑتا ہے اور ایک دن میں دو   پیکٹ ختم کردیتا ہے سگریٹ کے بغیر راپی سوتا بھی نہیں ہے۔

تاہم راپی کی ماں نے ڈاکٹر سے رابطہ کر لیا ہے ۔

Comments

comments

مزید پڑھیں۔  بولیویا کی 117 سالہ خاتون اب 118 کی ہوجایئں گی

اپنا تبصرہ بھیجیں