شہباز شریف کی بطور چیئرمین پی اے سی تقرری عدالت میں چیلنج

پی اے سی

لاہور: قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف شہباز شریف کو پبلک اکاؤنٹس کمیٹی (پی اے سی) کا چیئرمین بنانے کے اقدام کو لاہور ہائیکورٹ میں چیلنج کردیا گیا۔

درخواست گزار اظہر صدیق ایڈووکیٹ کی جانب سے دائر درخواست میں وفاقی حکومت اور اسپیکر قومی اسمبلی کو فریق بنایا گیا ہے۔

درخواست گزار نے مؤقف اختیار کیا ہے کہ شہباز شریف پر کرپشن کے الزامات ہیں اس لیے وہ یہ عہدہ نہیں سنبھال سکتے۔

درخواست گزار اظہر صدیق ایڈووکیٹ نے عدالت سے استدعا کی کہ شہباز شریف کو چیئرمین پبلک اکاؤنٹس کمیٹی بنانے کا اقدام کالعدم قرار دیا جائے۔

یاد رہے کہ شہباز شریف 21 دسمبر کو بلامقابلہ چیئرمین پبلک اکاؤنٹس کمیٹی منتخب ہوئے تھے اور ان کی زیرصدارت پی اے سی کا پہلا اجلاس آج ہونے جارہا ہے۔

مزید پڑھیں:  شہباز شریف کی زیرصدارت پبلک اکاؤنٹس کمیٹی کا پہلا اجلاس آج پارلیمنٹ ہاؤس میں ہوگا

شہباز شریف آشیانہ اقبال ہاؤسنگ اسکیم اسکینڈل کے سلسلے میں نیب لاہور کی حراست میں ہیں، نیب حکام پروڈکشن آرڈر جاری ہونے پر قومی اسمبلی اجلاس میں شرکت کے لیے انہیں لاہور سے اسلام آباد لاتے ہیں جبکہ وفاقی دارالحکومت کی انتظامیہ کی جانب سے منسٹر انکلیو میں واقع شہباز شریف کی رہائش گاہ کو سب جیل قرار دیا جاتا ہے۔

(Visited 5 times, 1 visits today)

Comments

comments

پی اے سی, شہباز شریف,

اپنا تبصرہ بھیجیں