ڈاکوؤں کا تعاقب کرتے ہوئے ڈولفن فورس کے ہاتھوں 14سالہ بچہ جابحق،ورثہ کا احتجاج

ڈولفن

لاہور :صوبائی دارلحکومت کے علاقہ شاد باغ میں ڈاکوؤں کا تعاقب کرتے ہوئے ڈولفن فورس کی فائرنگ سے 14سالہ راہگیر بچہ جاں بحق ہو گیا

ورثاء نے لاش سڑک پر رکھ کر شدید احتجاج کرتے ہوئے ذمے داروں کو گرفتار کر کے سخت کارروائی کا مطالبہ کیا ہے۔بتایا گیا ہے کہ شاد باغ میں ڈولفن فورس کے اہلکاروں نے ایک گاڑی میں موجود مشکوک افراد کو روکنے کی کوشش کی لیکن گاڑی میں سوار افراد نے گاڑی روکنے کی بجائے اور تیز کردی جس کی وجہ سے ڈولفن اہلکاروں نے اس کا تعاقب کرتے ہوئے اندھا دھند فائرنگ کردی۔ فائرنگ کی زد میں آکر سلیم نامی راہگیر جاں بحق ہوگیا۔ ڈولفن اہلکاروں کی فائرنگ سے جاں بحق ہونے والے نوجوان کے ورثاء نے لاش سڑک پر رکھ کر شدید احتجاج کیا جس کے باعث ٹریفک جام ہوگئی ، مظاہرین نے فائرنگ کرنے والے ڈولفن اہلکاروں کے خلاف کارروائی کا مطالبہ کیا۔

دوسری جانب ایس پی ڈولفن ندیم کھوکھر کا کہنا ہے کہ گاڑی میں سوار پانچ ڈاکوؤں کو گرفتار کرلیا گیا ہے جو دیگر شہروں میں بھی جرائم میں ملوث ہیں اور کرائے کی گاڑی لیکر واردات کے لئے آئے تھے ۔ انہوں نے کہا کہ ڈولفن فورس کے روکنے پر ڈاکوؤں نے فائرنگ شروع کر دی جس پر جوابی فائرنگ کی گئی ۔ واقعے کی مکمل تحقیقات کی جا رہی ہیں۔

Comments

comments

مزید پڑھیں۔  نواز شریف سے ہاتھ ملانے کی کوشش کرنیوالے لیگی کارکن پر سکیورٹی اہلکاروں کا تشدد

اپنا تبصرہ بھیجیں