بھارت مقبوضہ کشمیر میں جمہوری اصولوں کی دھجیاں بکھیر رہا ہے،جموں وکشمیر مسلم لیگ

جموں وکشمیر مسلم لیگ
loading...

محمد یوسف میر، اسداللہ پرے، شوکت حکیم، معراج الدین نندا اور مولوی سجاد کو عدالتی احکامات کے باوجود پیشی کے لئے عدالت میں حاضر نہیں کیا جا رہا

سرینگر: مقبوضہ کشمیر میں جموں وکشمیرنے غیر قانونی طور پر نظر بند تنظیم کے رہنماؤں اور کارکنوں کو پیشیوں کیلئے عدالتوں میں حاضر نہ کرنے پر سخت رد عمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ قابض انتظامیہ قوانیں کی دھجیاں اڑا رہی ہے۔

 کشمیر میڈیاسروس کی معلومات کےمطابق جموں وکشمیر مسلم لیگ کے ترجمان سجاد ایوبی نے سرینگر میں جاری ایک بیان میں کہا کہ محمد یوسف میر، اسداللہ پرے، شوکت حکیم، معراج الدین نندا اور مولوی سجاد کو عدالتی احکامات کے باوجود پیشی کے لئے عدالت میں حاضر نہیں کیا جا رہا جسکا واحد مقصد انکی غیر قانونی نظربندی کو طول دینا اور انہیں سیاسی انتقام کا نشانہ بنانا ہے۔

ترجمان سجاد ایوبی کا کہنا  ہےکہ بھارت ایک طرف دنیا کا سب سے بڑا جمہوری ہونے کا دعویٰ کرتا ہے لیکن دوسری طرف وہ مقبوضہ علاقے میں جمہوری اصولوں اور قوانین کی دھجیاں اڑا رہا ہے۔ بھارت کی یہ غلط فہمی ہے کہ وہ اوچھے ہتھکنڈوں کے ذریعے مسرت عالم بٹ، محمد یوسف میر ، اسد اللہ پرے اور دیگر آزادی پسند رہنماؤں اور کارکنوں کے حوصلے پست کر سکے گا۔

ترجمان سجاد ایوبی نےغیر قانونی طو ر پر نظر تمام کشمیریوں کی عزم و ہمت کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا کہ بھارت کے غیر قانونی تسلط سے آزادی کی کشمیریوں کی مبنی برحق جد وجہد ایک روز ضرور رنگ لائے گی۔ دریں اثنا سجاد ایوبی نے بھارتی فورسز کے ہاتھوں تنظیم کے ضلع بانڈی پورہ کے صدر غلام حسن شاہ کے علاوہ مظفر احمد لون ، نصیر احمد ،زاہد رسول گنائی، شاہد رسول گنائی، سجاد احمد نجار، محمد ایوب گنائی اور اشفاق احمد گنائی گرفتاری کی شدید مذمت کی۔

مزید پڑھیں۔  شناختی کارڈ بلاک ہوتے ہی پرویز مشرف کا پاسپورٹ بھی بلاک ہوجائے گا

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں