عاصمہ قتل کیس ٗ مرکزی ملزم کا بھائی گرفتار ٗ پولیس

ملزم گرفتار
loading...

بہت جلد عاصمہ رانی اور مردان کی 4 سالہ عاصمہ کے قاتل گرفتار کیے جائیں گے ٗآر پی او کا دعویٰ
کوہاٹ: پولیس نے میڈیکل کی طالبہ عاصمہ رانی کے قتل میں نامزد ایک ملزم صدیق اللہ آفریدی کو گرفتار کرلیا۔میڈیا رپورٹ کے مطابق 28 جنوری کو کوہاٹ میں میڈیکل کی طالبہ عاصمہ رانی کو رشتہ نہ دینے پر مجاہد اللہ آفریدی نامی شخص نے فائرنگ کا نشانہ بنایا تھا جس سے لڑکی جاں بحق ہوگئی۔ڈی پی او کوہاٹ کے مطابق عاصمہ کے قتل میں نامزد ملزم صدیق آفریدی کو گرفتار کرلیا ہے جو مرکزی ملزم مجاہد گل آفریدی کا بھائی ہے جبکہ بیرون ملک فرار مرکزی ملزم کی گرفتاری کیلئے انٹرپول سے رابطہ کیا جارہا ہے۔آر پی او کوہاٹ اول خان نے کہا کہ بہت جلد عاصمہ رانی اور مردان کی 4 سالہ عاصمہ کے قاتل گرفتار کیے جائیں گے۔انہوں نے بتایا کہ عاصمہ رانی کے کیس میں نامزد ملزم صدیق اللہ کو گرفتار نہیں کیا گیا ہے ٗملزم مجاہداللہ اورصدیق اللہ بھائی ہیں ٗدونوں کو جلد ہی پکڑ لیا جائیگا۔آر پی او کوہاٹ کا کہنا تھا کہ کوہاٹ میں قتل کی جانے والی عاصمہ کے کیس میں کوئی سیاسی دباؤ نہیں، کیس میں میرٹ پر کام کررہے ہیں اور اس حوالے سے ہائی پروفائل تفتیشی ٹیم بنائی ہے جبکہ ملزم کی جس سے سیاسی وابستگی ہے وہ پولیس کے ساتھ تعاون کررہے ہیں۔ڈی آئی جی اول خان نے دعویٰ کیا ہے کہ پولیس کیس میں نتیجہ سامنے لے آئے گی۔واضح رہے کہ کوہاٹ میں طالبہ کو قتل کرنے کے بعد ملزم پولیس کی کارروائی سے پہلے ہی بیرون ملک فرار ہوگیا جسے گرفتار کرنے کیلئے انٹرپول سے مدد لینے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

مزید پڑھیں۔  آشیانہ ہاؤسنگ اسکینڈل میں گرفتار احمد چیمہ اور شاہد شفیق کو جوڈیشل ریمانڈ پر جیل بھیج دیا گیا

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں