گنے کا رس کینسر کا قدرتی علاج ہے ، ماہرین

گنے کا رس

گنے کا رس شوگر کے مریضوں کے لئے بھی بے حد مفید ہے،اس کے علاوہ یہ گردوں کی صحت کے لئے بھی اہم کردار کا حامل ہے

ماہرین کراچی:ماہرین صحت نے بتایا ہے کہ گنے کے رس میں کیلشیم، میگنیشیم، پوٹاشیم اور آئرن کی کافی مقدار موجود ہوتی ہے، جس کی وجہ سے اس کو کینسر کا قدرتی علاج سمجھا جاتا ہے۔

ماہرین کراچی نے کہا کہ گنے کا رس شدید گرم موسم میں انسانی جسم کو ٹھنڈا رکھنے، نظام ہضم کی درستگی اور خوراک کو با آسانی ہضم کرنے میں بھی معاون ثابت ہوتا ہے جبکہ گنے کا رس شوگر کے مریضوں کے لئے بھی بے حد مفید ہے۔ اس کے علاوہ یہ گردوں کی صحت کے لئے بھی اہم کردار کا حامل ہے۔

گنے کا رس دل کے امراض سے حفاظت کا بھی ذریعہ ہے کیوں کہ یہ جسم مں کولیسٹرول کی سطح کو بڑھنے نہیں دیتا۔انہوں نے کہا کہ گنے کا رس انسانی کے لئے کسی نعمت سے کم نہیں ہے جس کے استعمال سے جسم کو مختلف بیماریوں سے تحفظ فراہم کیا جا سکتا ہے۔

گنے کے رس میں چوں کہ کیلشیم اور فاسفورس بھی شامل ہوتا ہے، اس لئے یہ ہڈیوں کی مضبوطی میں کردار ادا کرتا ہے۔خون کی کمی کا شکار افراد گنے کا جوس ضرور پیءں کیوں کہ اس میں آئرن کی اچھی خاصی مقدار پائی جاتی ہے۔

Spread the love

Comments

comments

مزید پڑھیں۔  الیکشن میں عوام نے ملک دشمنوں کو رد کر دیا ،چودھری شجاعت حسین

اپنا تبصرہ بھیجیں