جیمز اینڈرسن سابق کھلاڑیوں کی جانب سے کڑی تنقید پر برہم

جیمز اینڈرسن

ہیڈنگلے :انگلش ٹیم کے تجربہ کار فاسٹ بالر جیمز اینڈرسن سابق انگلش کھلاڑیوں کی جانب سے کڑی تنقید پر بری طرح برہم ہیں جنہوں نے اس تجویز کو یکسر مسترد کردیا ہے کہ لیڈز ٹیسٹ سے اسٹوارٹ براڈ یا انہیں ڈراپ کردیا جائے۔

 واضح رہے کہ گزشتہ دس ٹیسٹ میچوں میں سے سات میں ناکامی کے بعد سابق انگلش کپتان مائیکل وان سمیت متعدد کھلاڑیوں نے انگلش ٹیم پر کڑی تنقید کی ہے لیکن جیمز اینڈرسن کا موقف ہے کہ شکستوں کا تسلسل کوئی بڑی مشکل نہیں کیونکہ میدان میں اترتے ہوئے ان میں اعتماد کا فقدان واضح ہے جو ناکامیوں کے بعد ایک عام سی بات ہے اور ایسے حالات کو تبدیل کرنے کیلئے کچھ خاص کرنا پڑتا ہے جس میں وہ ابھی تک ناکام رہے ہیں جبکہ قسمت بھی ان کا ساتھ نہیں دے رہی جس کی کامیابی کیلئے بہت زیادہ ضرورت ہوتی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ اس ہفتے وہ اپنی پوری کوشش کریں کہ حالات میں تبدیلی لائی جائے جس کیلئے ایک سے دو کھلاڑیوں کو انفرادی طور پر بہترین کارکردگی کیلئے اٹھ کھڑا ہونا پڑے گا۔ لیڈز پر گزشتہ نو میچوں میں 34 وکٹیں حاصل کرنے والے جیمز اینڈرسن کا کہنا تھا کہ وہ دوسرے ٹیسٹ میں زیادہ بہتر کھیل پیش کرنے کی کوشش کریں گے لیکن اس کیلئے اسٹوارٹ براڈ کو ڈراپ کرنا کسی طرح درست اقدام نہیں ہوگا کیونکہ ہم دونوں اس ٹیم کیلئے بہترین کارکردگی دکھاتے ہوئے 950وکٹیں لے چکے ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ لارڈز جیسی شکست کے بعد ہمیشہ شور ہوتا ہے لیکن اصل بات بہترین کھیل کا مظاہرہ ہی ہے۔

مزید پڑھیں۔  پی ایس ایل: غیر ملکی کھلاڑی اپنے ملک روانہ، پاکستان میں دوبارہ آکر کھیلنا چاہتے ہیں، ڈومنی

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں