غیر ملکی دورہ کیوں کروں میرے پاس وقت نہیں ہے :وزیراعظم پاکستان کا دبنگ انداز

عمران خان

وزیراعظم عمران خان کو ایک ایک دن قیمتی لگنے لگا ہے ان کا کہنا ہے کہ وہ  اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے اجلاس میں جاکر 4دن ضائع نہیں کرنا    چاہتے ہیں ،غیر ملکی دورے صرف پاکستان کے مفاد کےلئے ہوں گے سیر سپاٹے کرنے کے لیے نیہں

سینئر صحافیوں اور اینکر پرسن سے گفتگو کے دوران  عمران خان نے کہا کہ میڈیا مجھے کام کرنے کےلئے 3ماہ کا وقت دے اور اس کے بعد کھل کر تنقید کرے ،میں تنقید سے گھبراتا نہیں بلکہ اس سے مجھے مسائل حل کرنے میں مدد ملتی ہے۔

انہوں نے کہا کہ امریکا کی کوئی غلط  بات نہیں مانی جائے گی ،ہم امریکہ سے لڑنہیں سکتے اس سے تعلقات بہترکریں گے ۔

عمران خان نے کہا کہ جی ایچ کیو کا دورہ بہت اچھا رہا ،مجھ سے اس دوران کہا گیا کہ ادارہ آپ کے ساتھ  ہے۔

وزیراعظم نے کہا کہ احتساب کے بغیر ملک ترقی نہیں کرسکتا ، چیئرمین نیب کو صاف کہہ دیا ہے کہ حکومتی رکن بھی کرپشن میں اگر ملوث ہوا تو کارروائی کریں ، احتساب بلاامتیاز کیا جائے۔

ان کا کہناتھاکہ گردشی قرضے 1200 ارب تک پہنچ گئے ہیں،ملکی مفاد کے خلاف ہونے والے معاہدے منسوخ کریں گے ،حکومت کو اپوزیشن سے کوئی خطرہ نہیں ہے۔

عمران خان نے یہ بھی کہا کہ عوام کوزحمت سے بچانے کے لیے ہیلی کاپٹرکا استعمال کیاجو ٹیم چنی ہے ان کا ماضی کیا تھا اس کا ذمہ دارنہیں ،ٹیم کو بتا دیا ہےکہ حال میں ایک روپے کی بھی ہیر پھیر برداشت نہیں کروں گا۔

مزید پڑھیں۔  امید ہے عمران خان عافیہ کو واپس لانے کا وعدہ نہیں توڑیں گے، ڈاکٹر فوزیہ

وزیراعظم نے مزید کہا کہ وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار کی کھل کر حمایت کی ہے۔

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں