15 ماہ پانی میں رہنے کے باوجود فون صحیح حالت میں برآمد

فون

گزشتہ دنوں یہ خبر سامنے آئی تھی کہ آئس لینڈ میں چھوٹے طیارے سے گر جانے والا آئی فون 13 ماہ بعد ملا اور وہ سخت موسمی حالات کے باوجود بدستور کام کررہا تھا۔

مگر یہ تو وہ آئی فون تھا جو زمین پر گرا تھا، تصور کریں ایسے فون کا جو دریا میں گر گیا ہو اور پھر بھی کئی ماہ بعد ورکنگ کنڈیشن میں مل جائے؟

جی ہاں ایسا واقعی ہوا ہے اور ایریکا بینیٹ نامی خاتون نے جون 2018 میں اپنا آئی فون ایک دریا میں گرا دیا تھا جو کہ ان کے لیے ایک بڑا دھچکا بھی تھا کیونکہ اس ڈیوائس میں ان کے انتقال کرجانے والے والد کے پیغامات محفوظ تھے۔

ساﺅتھ کیرولائنا سے تعلق رکھنے والی خاتون کے مطابق والد کا آخری پیغام فادرز ڈے کے موقع پر ملا تھا ‘وہ فون میرے لیے بہت اہمیت رکھتا تھا کیونکہ وہ آخری بات تھی جو میرے والد نے کہی’۔

سام سنگ نے سب سے طاقتور کیمرے والا فون متعارف کرا دیا

مگر اس پیغام کے ملنے کے چند دن بعد ہی ایک تفریحی سفر کے دوران دریاے ایڈیسٹو میں یہ فون گرگیا اور حیران کن طور پر 15 ماہ بعد ایک یوٹیوب اسٹار نے اسے ڈھونڈ لیا (ویڈیو نیچے دیکھ سکتے ہیں)۔

مائیکل بینیٹ نامی یوٹیوبر کا ایریکا بینیٹ سے کوئی تعلق نہیں تھا اور وہ اس دریا میں غوطہ لگا کر مچھلی پکڑنے کی ویڈیو بنارہا تھا اور اس دوران وہ آئی فون مل گیا۔

یہ فون 15 ماہ سے زائد عرصے تک پانی میں رہا مگر جب اسے نکالا گیا تو وہ کام کررہا تھا جس کی وجہ اس کا واٹر پروف کیس تھا۔

یہ یوٹیوبر اکثر اس طرح کے مظاہروں میں مختلف اشیا جیسے دولت اور زیورات نکالتا رہتا ہے اور جب فون کو نکالا تو اسے کیس سے نکالنے کے بعد چلانے کی کوشش کی۔

اسے چارج کیا اور پھر مالک کو تلاش کرنے کی کوشش کی اور ایریکا سے رابطہ کرنے میں کامیاب ہوگیا اور اسے کہا ‘کیا آپ نے کبھی سوچا تھا کہ فون واپس مل جائے گا؟’

ایریکا نے جواب دیا ‘نہیں میں نے کبھی ایسا نہیں سوچا تھا’۔

(Visited 60 times, 1 visits today)

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں