چیئرمین بلاول بھٹو کا بڑا فیصلہ سامنے آگیا

وکٹوریہ
Loading...

بہاولپور: پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو نے کہا ہے کہ پیپلز پارٹی دھرنے میں شرکت نہیں کر سکتی، مطالبات ہمارے ایک ہیں لیکن پہلے دن سے ہمارا مؤقف ہے دھرنے میں شرکت نہیں کریں گے۔

تفصیلات کے مطابق بلاول بھٹو نے بہاولپور میں وکٹوریہ اسپتال میں سانحہ تیز گام کے زخمیوں کی عیادت کی، بعد ازاں اسپتال کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انھوں نے کہا کہ پیپلز پارٹی نے پہلے دن سے مارچ اور جلسے کی حمایت کی ہے، اگر سی ای سی دھرنے پر کوئی فیصلہ کرے گی تو نظرثانی بھی کر سکتے ہیں۔

بلاول بھٹو کا کہنا تھا فضل الرحمان نے یہ نہیں کہا کہ وزیر اعظم ہاؤس جا کر وزیر اعظم کو گھسیٹیں گے، وزیر اعظم کو گرفتار کریں گے، مولانا نے یہ کہا کہ لاکھوں لوگوں کا جذبہ ہے وہ وزیر اعظم کو پکڑ سکتے ہیں۔

وکٹوریہ

Loading...

بلاول بھٹو وکٹوریہ اسپتال میں سانحہ تیز گام کے ایک زخمی کی عیادت کرتے ہوئے
پی پی چیئرمین نے کہا کہ وزیر ریلوے کو فوری استعفیٰ دینا چاہیے، موجودہ وزیر ریلوے کے دور میں سب سے زیادہ حادثات ہوئے ہیں، وفاق اور پنجاب حکومت اپنی ذمہ داری نبھائیں، افسوس ہے سانحہ تیزگام کے متاثرین کے ساتھ رویہ غیر مناسب ہے۔

انھوں نے کہا کہ سندھ میں منتخب حکومت ہے، خامیاں اور کوتاہیاں بھی ہیں، جب سلیکٹڈ حکومت آتی ہے تو عوام کا خیال نہیں رکھتی، کشمیر پر بھارتی حملہ نہ ہوتا تو کرتارپور کی حوصلہ افزائی کرتے، حکومت وقت کو اپنی خارجہ پالیسی پر غور کرنا چاہیے، تاثر ہے کشمیر پر سودا ہوا ہے جو عوام قبول نہیں کر رہے ہیں، حکومت کو کشمیر کے مسئلے پر اپنی پوزیشن واضح کرنا ہوگی۔

(Visited 31 times, 1 visits today)
loading...
Advertisements

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں