برازیل میں ایک باڈی بلڈر نے زندگی کو داﺅ پر لگا دیا

برازیل میں ایک باڈی بلڈر نے اپنے جسم کو دوسروں کے لیے متاثرکن بنانے کے لیے ورزش یا سخت محنت کی بجائے زندگی کو داﺅ پر لگادیا۔

50 سال سے زائد عمر کے والدیر سیگاٹو نامی شخص نے فالج اور دیگر انفیکشن کے خطرات کے باوجود اپنے جسم بنانے کے لیے آئل کو جسم میں انجیکٹ کیا اور بائیسپس 23 انچ کے کرلیے۔

ساﺅ پاﺅلو سے تعلق رکھنے والے باڈی بلڈر جوانی سے ہی آرنلڈ شوازینگر کی جسمانی ساخت کے مداح ہیں اور ایک فکشن سپرہیرو دی ہلک کو بھی پسند کرتے ہیں جس کو گلیوں کا عفریت بھی کہا جاتا ہے۔

3 سال قبل انہیں خبردار کیا گیا تھا کہ ان کے ہاتھوں کو کاٹنا پڑسکتا ہے اور یہ ان جان لیوا طبی مسائل میں معمولی ہے جن کا انہیں اعصاب اور مسلز کو پہنچنے والے نقصان کی صورت میں سامنا ہوسکتا ہے۔

کس رنگ کے لباس میں آپ زیادہ پراعتماد لگتے ہیں؟

والدیر سیگاٹو برسوں سے اپنے بازﺅں میں سینتھول نامی ایندھن انجیکشن کے ذریعے داخل کررہے ہیں اور 2016 میں ایک انٹرویو میں ان کا کہنا تھا ‘لوگ مجھے ہلک، شوازینگر اور ہی مین کہتے ہیں اور مجھے یہ پسند بھی ہے، میں نے اپنے بائیسیپس دوگنا بڑھا دیئے ہیں مگر میں ان کو مزید بڑا کرنا چاہتا ہوں’۔

اب وہ فخریہ انداز میں سوشل میڈیا پر اپنی تصاویر اور ویڈیوز شیئر کرتے ہیں اور خود کو والدیر سینتھول کہتے ہیں حالانکہ جوانی میں وہ منشیاب کے عادی ہونے کی وجہ سے جسمانی طور پر بہت کم وزن تھے۔

ان کا ایک انٹرویو میں کہنا تھا ‘میں منشیات کا عادی ہوگیا تھا اور میرا وزن کم ہونے لگتا تھا کیونکہ جب آپ کچھ نہیں کھاتے تو زندگی غلط سمت کی جانب چل پڑتی ہے’۔

بعد ازاں منشیات ترک کرکے انہوں نے جم جانا شروع کیا مگر ورزش سے جو کچھ فائدے حاصل ہوسکتے تھے، وہ اس سے دو یا 3 گنا زیادہ چاہتے تھے۔

جم میں ہی کسی نے ان کو سینتھول کی پیشکش کی اور ماضی میں منشیات کے عادی ہونے کی وجہ سے وہ بہت جلد اس مسل بڑھانے والے جز کے بھی عادی ہوگئے، جس کو وہ تیل میں ڈال کر اپنی نسوں میں انڈیل دیتے۔

ایک طبی جریدے یورپ پب میڈ سینٹرل کے مطابق سینتھول کے سائیڈ ایفیکٹس کئی گنا زیادہ ہیں کیونکہ یہ اعصاب کو نقصان پہنچا سکتا ہے، جبکہ آئل سے پھیپھڑوں کو نقصان پہنچ سکتا ہے فالج اور انفیکشن وغیرہ کا خطرہ بھی لاحق ہوسکتا ہے۔

سینتھول کو وہ تلوں کے تیل میں شامل کرتے، جس میں تیل کا تناسب 85 فیصد، ساڑھے 7 فیصد الکحل اور ساڑھے سات فیصد ایک درد کش دوا شامل ہوتی ہے اور ان سے جو نتائج حاصل ہوئے اس نے والدیر سیگاٹو کو جسمانی طور پر تو پھلا دیا مگر اس سے کوئی جسمانی مضبوطی حاصل نہیں ہوئی۔

تین سال قبل انہیں خبردار کیا گیا تھا کہ اس طریقہ کار کو جاری رکھنے پر ان کو معذوری کا سامنا ہوسکتا ہے۔

Leave a Reply