چوتھی شادی کی کوشش پر پہلی بیوی کے ہاتھوں زبردست دُرگت

شادی
Loading...

چوتھی شادی کرنے کی کوشش کرنے والے شخص کو پہلی بیوی نے عین موقع پر پکڑ کر اسی عدالت میں زبردست دُرگت کا نشانہ بنایا، جہاں وہ کورٹ میرج کی منصوبہ بندی کررہا تھا۔

یہ واقعہ بھارتی ریاست بہار کے ضلع ارریہ کی عدالت میں پیش آیا جہاں ممتاز نامی شخص شادی کے لیے پہنچا تھا، حالانکہ اس کا تعلق ریاست کے دوسرے ضلع بیتیاہ سے تھا۔

ہندوستان ٹائمز کی رپورٹ کے مطابق 30 سال سے زائد عمر کے ممتاز ارریہ سے تعلق رکھنے والی ایک خاتون سے شادی کرنے کی کوشش کررہا تھا، جس دوران اس کی پہلی بیوی عدالت پہنچ گئی اور پھر فلموں جیسا ڈرامہ حقیقت میں دیکھنے میں آیا۔

وہ جگہیں جہاں آپ کو موبائل فون ہرگز چارج نہیں کرنا چاہیے!

مقامی پولیس کے مطابق ممتاز نے چوتھی شادی کے لیے خاتون سے فیس بک کے ذریعے رابطہ کیا، مگر بدقسمتی سے جب وہ شادی کے لیے عدالت پہنچا تو پہلی بیوی کے کسی رشتے دار نے اسے نامعلوم خاتون کے ساتھ عدالت میں دیکھ کر پہلی بیوی کو الرٹ کردیا۔

وہ خاتون (نام پولیس کی جانب سے ظاہر نہیں کیا گیا) وقت ضائع کیے بغیر فوری طور پر عدالت میں پہنچی اور دیکھا کہ اس کا شوہر شادی رچا رہا ہے تو اس کا پارہ آسمان پر پہنچ گیا اور اسے مارنا شروع کردیا۔

جب پولیس نے مداخلت کی کوشش کی، تو پہلی بیوی کے مشتعل رشتے داروں نے انہیں روکا اور شوہر کو تشدد کا بناتے ہوئے پولیس کی گاڑی کو بھی نقصان پہنچایا۔

Loading...

تاہم پولیس کسی نہ کسی طرح شوہر کو مشتعل ہجوم سے بچانے میں کامیابی ہوگئی اور وکلا کے مطابق اگر پولیس بروقت اقدام نہ کرتی تو شادی کی کوشش پر اس شخص کو مشتعل افراد مار دیتے۔

بعد ازاں پولیس نے اس شخص اور لڑکی کو پولیس اسٹیشن پہنچایا اور پہلی بیوی کی جانب سے دائر مقدمے پر تفتیش شروع کردی۔

ارریہ ٹاﺅن اسٹیشن کے ایس ایچ او کے مطابق ہم اس شخص اور پہلی بیوی کے بیانات کی صداقت جاننے کی کوشش کررہے ہیں اور اس کے بعد ہی کوئی قانونی اقداما کیا جائے گا۔

ایس ایچ او کا کہنا تھا کہ ممتاز جس لڑکی سے شادی کرنے کی کوشش کررہا تھا اسے بھی حراست میں لیا گیا جبکہ اس کے گھروالوں کو بھی طلب کرلیا گیا ہے۔

(Visited 66 times, 1 visits today)
loading...
Advertisements

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں