جوہانسبرگ ٹیسٹ: جنوبی افریقہ نے پاکستان کو سیریز میں وائٹ واش کر دیا

جوہانسبرگ: جنوبی افریقہ نے تیسرے ٹیسٹ میچ میں پاکستان کو 107 رنز سے ہرا کر تین ٹیسٹ میچوں کی سیریز میں کلین سوئپ کردیا۔

جوہانسبرگ ٹیسٹ میں جیت کے لیے 381 رنز کے تعاقب میں قومی ٹیم شدید مشکلات سے دوچار رہی۔

جوہانسبرگ ٹیسٹ کے چوتھے روز قومی ٹیم نے 3 وکٹوں کے نقصان پر 153 رنز سے اننگز کا آغاز کیا تو اسد شفیق 48 اور بابر اعظم 17 رنز کے ساتھ کریز پر موجود تھے۔

دونوں بلے بازوں نے محتاط انداز اپنایا لیکن بابراعظم 21 کے انفرادی اسکور پر پویلین لوٹ گئے جس کے بعد آنے والے کپتان سرفراز احمد بھی بغیر کوئی رن بنائے چلتے بنے۔

اسد شفیق نے پروٹیز بولروں کے سامنے کچھ مزاحمت کی کوشش کی لیکن وہ بھی 179 کے مجموعی اسکور پر ہمت ہار گئے، انہوں نے 11 چوکوں کی مدد سے 65 رنز کی اننگز کھیلی۔

بعدازاں امام الحق نے 35، شاداب خان نے 46 اور حسن علی نے 22 رنز بنائے۔

جنوبی افریقا کی جانب سے رباڈا اور اولیویئر نے تین، تین کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا جبکہ ڈیل اسٹین 2 اور فلینڈر نے ایک وکٹ حاصل کی۔

loading...

اس سے قبل دوسری اننگز میں پاکستانی اوپنرز امام الحق اور شان مسعود نے ٹیم کو 67 رنز کا آغاز فراہم کیا، امام الحق 35، شان مسعود 37 اور آؤٹ آف فارم اظہر علی نے ایک مرتبہ پھر مایوس کن کارکردگی پیش کی اور صرف 15 رنز بنا کر پویلین کی راہ لی۔

یاد رہے کہ پاکستان کی پوری ٹیم اپنی پہلی اننگز میں 185 رنز پر ڈھیر ہوگئی تھی جب کہ میزبان ٹیم نے پہلی اننگز میں 262 اور دوسری میں 303 رنز بنائے۔

پاکستان اور جنوبی افریقہ کے درمیان ٹیسٹ میچوں کی تاریخ پر ایک نظر

جوہانسبرگ ٹیسٹ میں 107 رنز سے شکست کے بعد جنوبی افریقہ نے پاکستان کو کلین سوئپ کردیا ہے، اس سے قبل سنچورین کے پہلے ٹیسٹ میں پاکستان کو6 وکٹوں سے شکست ہوئی تھی جبکہ کیپ ٹاؤن کا دوسرا ٹیسٹ پاکستان 9 وکٹوں سے ہارا تھا۔

واضح رہے کہ مصباح الحق کی قیادت میں 2013 میں بھی پاکستان اوے سیریز کے تینوں میچ ہارا تھا۔

پاکستان نے جنوبی افریقا کے خلاف پہلا ٹیسٹ 1994 میں کھیلا اور اب تک 26 ٹیسٹ میچز میں سے پاکستان، جنوبی افریقہ کے خلاف صرف 4 میچز جیتا ہے۔

پاکستان نے جنوبی افریقا کے خلاف پہلا ٹیسٹ 1998 میں ڈربن میں جیتا تھا جبکہ گرین شرٹس نے جنوبی افریقہ کے خلاف آخری ٹیسٹ میچ 2013 میں ابوظہبی میں جیتا تھا۔

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں