جنات کے انسانوں کے ساتھ جنسی تعلقات!

جنات

 جس طرح انسانوں میں اچھے اور برے پائے جاتے ہیں اسی طرح جنات میں بھی کچھ نیک سیرت اور کچھ بدکردار ہوتے ہیں۔

جب ان بدکردار جنوں میں سے کوئی کسی انسان پر غلبہ پا لیتا ہے تو اپنی ہر شیطانی خواہش کی تکمیل اس انسان کے ذریعے کرنے کی کوشش کرتا ہے، جس میں جنسی خواہش بھی شامل ہے۔

  بدکردار جن کے مظالم اسی وقت شروع ہوتے ہیں جب اس کے قبضے میں موجود شخص اُس کی غلط خواہشات پوری کرنے سے انکار کرتا ہے۔

اس کی مثال کچھ یوں ہے کہ جب جن کا جی تمباکو نوشی کو چاہتا ہے تو اس کا اسیر شخص سگریٹ پینے لگتا ہے۔ جب اس کا جی فحش بینی کو چاہتا ہے تو اس کا اسیر شخص فحش فلمیں دیکھنا شروع کر دیتا ہے۔

جونہی یہ انسان غلط کام سے رکنے کی کوشش کرتا تو جن غضبناک ہوجاتا ہے اور اس پر ظلم ڈھانا شروع کر دیتا ہے۔‘‘

ابتدائی طور پر جن محض لفظوں کی صورت میں محبت کا اظہار کرتا ہے۔ وہ یہ کہہ کر اپنے اسیر کو چھوڑنے سے انکار کرتا ہے کہ وہ اس کے بغیر نہیں رہ سکتا۔

اکثر جن اپنے اسیر سے فوری طور پر بات چیت شروع کر دیتے ہیں البتہ عفریت جن بات نہیں کرتا وہ ہمیشہ خاموش رہتا ہے۔

مزید پڑھیں: انسان جاتا تو ہے مگر واپس نہیں آتا

لفظی اظہار محبت سے بڑھ کر یہ بدکردار جن انسان کے ساتھ جنسی تعلق استوار کرنے کی جانب بھی مائل ہوتے ہیں اور اگر مذہبی احکامات کے دائرے میں رہتے ہوئے ضروری حفاظتی اقدامات نا کئے جائیں تو یہ انسان کو جنسی ہوس کا نشانہ بھی بنا سکتے ہیں۔

(Visited 33 times, 1 visits today)

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں