رکی پونٹنگ نے بابر اعظم کو خطرہ قرار دیتے ہوئے آسٹریلوی باؤلرز کو خبردار کردیا

سابق عظیم آسٹریلین کپتان رکی پونٹنگ نے پاکستان اور آسٹریلیا کے درمیان دو ٹیسٹ میچوں کی سیریز کے لیے بابر اعظم کو خطرہ قرار دیتے ہوئے آسٹریلوی باؤلرز کو خبردار کردیا ہے۔

بابر اعظم اس وقت ٹی20 کے عالمی نمبر ایک اور ون ڈے کی عالمی رینکنگ میں تیسرے بہترین بلے باز ہیں اور یہی وجہ ہے کہ ٹیسٹ کرکٹ میں صرف 35 کی اوسط کے باوجود رکی پونٹنگ نے انہیں ایک بڑا خطرہ قرار دیا ہے۔

کرکٹ آسٹریلیا سے گفتگو کرتے ہوئے رکی پونٹنگ نے کہا کہ ہم نے ابھی تک بابر اعظم کی ٹیسٹ کرکٹ میں بہترین کارکردگی نہیں دیکھی، ان کی کم و بیش 20 ٹیسٹ کھیل کر تقریباً 35 کی اوسط ہے لیکن وہ اس سے بہتر کرکٹر ہیں، ان کا ون ڈے میں ایوریج 54 اور اسٹرائیک ریٹ 90 کا ہے۔

ایمرجنگ ٹیمز ایشیا کپ: پاکستان کی بھارت کو شکست

سابق آسٹریلین کپتان نے بابر اعظم کو بہترین کلاس کا حامل بلے باز قرار دیتے ہوئے کہا کہ وہ ایک باصلاحیت کرکٹر ہیں اور اس سیزن میں بابر ہی وہ بلے باز ہوں گے جن کی بیٹنگ پر میری نظریں سب سے زیادہ مرکوز ہوں گی، میں نے کئی آسٹریلین اور کیوی کرکٹر دیکھے ہیں لیکن بابر کی بیٹنگ دیکھنے کے لیے بہت پرجوش ہوں۔

پاکستان اور آسٹریلیا کے درمیان دو ٹیسٹ میچوں کی سیریز کا آغاز 21نومبر سے برسبین میں ہوگا اور بابر اعظم آسٹریلیا اے کے خلاف سہ روزہ پریکٹس میچ میں 157 رنز کی شاندار اننگز کھیل کر اپنی فارم کا ثبوت دے چکے ہیں۔

وہ 3 سال قبل آسٹریلیا کا دورہ کرنے والی پاکستانی ٹیم کا بھی حصہ تھے لیکن انہیں سابق دورے میں تیسرے نمبر پر بیٹنگ کرتے ہوئے مشکلات کا سامنا کرنا پڑا تھا خصوصاً وہ اکثر مواقع پر جوش ہیزل وُڈ کو وکٹ دے بیٹھے تھے۔

اس موقع پر رکی پونٹنگ نے پاکستانی ٹیم مینجمنٹ کو ٹیسٹ میچوں میں بابر اعظم کی کامیابی کا گُر بتاتے ہوئے کہا کہ انہیں نئی گیند سے دور رکھا جائے اور جب گیند پرانا ہو جائے گی تو وہ بہت موثر ثابت ہوں گے۔

رکی پونٹنگ نے کہا کہ پاکستان نے انہیں اس سے قبل تیسرے نمبر پر آزمایا لیکن یہ طریقہ کامیاب نہ ہو سکا لہٰذا میرا مشورہ ہوگا کہ انہیں آسٹریلیا میں نئی گیند سے دور رکھیں کیونکہ میرے خیال میں اسی طرح سے آپ ان کی بہترین کارکردگی حاصل کر سکتے ہیں۔

(Visited 9 times, 1 visits today)

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں