دریائے دجلہ میں کشتی الٹنے سے 71 افراد جاں‌ بحق

دریائے دجلہ
Loading...

عراق کے تاریخی شہر موصل کے قریب دریائے دجلہ میں مسافروں سے بھری کشتی ڈوب گئی جس کے نتیجے میں 72 افراد ہلاک اور متعدد لاپتہ ہوگئے۔

عراق کے محکمہ شہری دفاع کی جانب سے جاری بیان کے مطابق موصل کے قریب دریائے دجلہ میں مسافر بردار کشتی ڈوب گئی جس میں گنجائش سے زیادہ افراد سوار تھے۔

موصل کے محکمہ شہری دفاع کے سربراہ حسام خلیل نے بتایا کہ جاں بحق ہونے والوں میں زیادہ تعداد خواتین اور بچوں کی ہے جو تیر کر اپنی جان نہ بچاسکے۔

انہوں نے کہا کہ جشن بہاراں کے سلسلے میں ‘نوروز’ کا تہوار منایا جارہا ہے جس کی وجہ سے ام رباعین جزیرے میں سیاحوں کی کافی آمد و رفت ہے۔

Loading...

حسام خلیل نے بتایا کہ ریسکیو ٹیمیں لاپتہ ہونے والے افراد کو ڈھونڈنے کی کوشش کررہی ہیں اور اب تک 67 افراد کو بچایا جاچکا ہے جبکہ 55 افراد لاپتہ ہیں۔

تارکین وطن کی کشتی ڈوب گئی، درجنوں مہاجرین ہلاک

اطلاعات کے مطابق کشتی میں 200 کے قریب افراد سوار تھے جو کرد سال نو کا جشن منانے کیلئے دریائے دجلہ کے کنارے واقعے ایک تھیم پارک کی جانب جارہے تھے۔

عراقی وزیراعظم عادل عبدالمہدی نے کشتی ڈوبنے کے واقعہ کی تحقیقات کا حکم دے دیا ہے۔

(Visited 93 times, 1 visits today)
loading...
Advertisements

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں