کرکٹ ورلڈ کپ کے فائنل کا نتیجہ 1 ہفتے بعد سمجھ آیا، راس ٹیلر

راس ٹیلر
Loading...

نیوزی لینڈ کے تجربہ کار مڈل آرڈر بلے باز راس ٹیلر کا کہنا ہے کہ کرکٹ ورلڈ کپ کے فائنل کا نتیجہ سمجھنے میں ایک ہفتہ لگا۔

بارہویں کرکٹ ورلڈکپ کا فائنل 14 جولائی کو انگلینڈ اور نیوزی لینڈ کی ٹیموں کے درمیان لارڈز کے تاریخی میدان پر کھیلا گیا تھا۔ مقررہ 50 اوورز میں نتیجہ برابر ہونے پر میچ کا نتیجہ سپر اوور کے ذریعے ہوا تھا جس میں انگلینڈ کو زیادہ باؤنڈریز کی بنیاد پر فاتح قرار دیا گیا تھا۔

کیوی ٹیم کے مڈل آرڈر بلے باز راس ٹیلر کا کہنا ہے کہ فائنل میچ کے ساتھ جذباتی پن وابستہ ہے، اس میں کئی نشیب و فراز آئے۔ راس ٹیلر نے کہا کہ ورلڈ کپ فائنل دوبارہ دیکھنے کا کوئی ارادہ نہیں ہے، دوبارہ کبھی فائنل نہیں دیکھوں گا۔

Loading...

انہوں نے کہا کہ فائنل میچ برابر ہونے کے بعد امپائرز سے ہاتھ ملانے گیا تو پتہ چلا کہ سپر اوور ہو گا۔ ان کا کہنا تھا کہ فائنل کے بعد پیرس چلا گیا، فیملی کے ساتھ وقت گزارا تو آئی سی سی قوانین کی سمجھ آئی۔

آئی سی سی نے لاہور میں بائیو میکنکس لیب کی منظوری دے دی

کیوی بلے باز کا کہنا تھا کہ ایفل ٹاور کے پاس لوگوں نے آ کر کہا کہ فائنل بہت شاندار تھا، مجھے فائنل میچ کا نتیجہ سمجھنے میں ایک ہفتہ لگا۔

(Visited 17 times, 1 visits today)
Loading...
Advertisements

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں