1999ء کے چنائی ٹیسٹ کو قومی تاریخ کا یادگار ٹیسٹ قرار دیدیا گیا

پی سی بی

لاہور: پی سی بی کی طرف سے یادگار ٹیسٹ فتح کا اعلان کر دیا گیا۔ ٹویٹر پر پول کے بعد کرکٹ بورڈ حکام نے نتیجے کا اعلان کیا۔ شائقینِ کرکٹ نے چنائی ٹیسٹ 1999 کو قومی تاریخ کا یادگار ٹیسٹ قرار دے دیا۔

پی سی بی کی جانب سے پاکستان کے یادگار ترین ٹیسٹ کے لیے ٹوئٹر اور فیس بک پر پول ڈالا گیا۔ تین روز تک جاری رہنے والی پولنگ ٹوئٹر پر 1 لاکھ 9 ہزار افراد تک پہنچی جب کہ فیس بک پر اس کی ریچ 10 لاکھ 20 ہزار رہی۔ پی سی بی کی جانب سے تین روزہ پولنگ میں 15 ہزار 847 شائقینِ کرکٹ نے ووٹ دیئے۔

سب سے زیادہ 65 فیصد شائقین نے 1999 میں ہونے والے چنئی ٹیسٹ کے حق میں ووٹ دیئے، بنگلور ٹیسٹ 1987 کو 15 فیصد ووٹ ملے، اوول ٹیسٹ 1954 کو 11 فیصد اور کراچی ٹیسٹ 1994 کو 10 فیصد ووٹ ملے۔

سوئنگ کے سلطان اور سابق کپتان وسیم اکرم نے کہا کہ میرا ووٹ بھی چنئی ٹیسٹ کیلئے تھا، چنئی ٹیسٹ پریشر کو جاننے اور اس میں پرفارم کرنے کی بہترین مثال ہے۔

دوسری جانب شاہد آفریدی کا کہنا تھا کہ فخر ہےکہ ایسی ٹیم کاحصہ رہا جو کسی بھی لمحے میچ جیتنے کی صلاحیت رکھتی تھی، میچ میں اپنی کارکردگی سے خوشی ہوئی۔

شاہد آفریدی کا مزید کہنا تھا کہ چنئی ٹیسٹ نے دوسرا کے موجد ثقلین مشتاق کو پہچان دی تھی۔ پاکستان کرکٹ بورڈ کے مینیجنگ ڈائریکٹر وسیم خان نے کہا کہ دو دہائیوں بعد بھی شائقینِ کرکٹ کا جشن چنئی ٹیسٹ میں شاندار فتح کا ثبوت ہے، پاکستان ٹیسٹ کا قابل فخر ملک ہے۔

ایم ڈی وسیم خان نے مزید کہا کہ آئی سی سی ٹیسٹ چیمپئن شپ کے فروغ کے لیے اپنا کردار ادا کرتے رہیں گے۔

خیال رہے کہ 1999 میں بھارتی شہر چنئی میں کھیلے گئے ٹیسٹ میچ میں پاکستان نے انتہائی دلچسپ مقابلے کے بعد بھارت کو 12 رنز سے شکست دی تھی۔ پاکستان کی جانب سے ثقلین مشتاق نے شاندار بولنگ کا مظاہرہ کرتے ہوئے میچ کی دونوں اننگز میں 5، 5 بھارتی کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا تھا۔

(Visited 37 times, 1 visits today)

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں