شہباز شریف کی گرفتاری کیلئے نیب کا ان کی رہائش گاہ پر چھاپہ

جسٹس عظمت

آمدن سے زائد اثاثہ جات اور مبینہ منی لانڈرنگ کیس میں عدم پیشی پر قومی احتساب بیورو (نیب) لاہور کی ٹیم نے شہباز شریف کی گرفتاری کیلئے ان کی رہائش گاہ پر پولیس کی بھاری نفری کے ساتھ چھاپہ مارا تاہم شہباز شریف گھر میں موجود نہیں تھے۔

اطلاعات کے مطابق نیب لاہور کی ٹیم نے ماڈل ٹاؤن میں سابق وزیراعلیٰ پنجاب اور قومی اسمبلی کے موجودہ قائد حزب اختلاف شہباز شریف کی رہائش گاہ پر چھاپہ مارا اور تقریباً ڈیڑھ گھنٹے تک گھر کے اندر موجود رہے تاہم انہیں بتایا گیا کہ شہباز شریف گھر میں موجود نہیں ہیں جس کے بعد ٹیم وہاں سے روانہ ہوگئی۔

ذرائع کے مطابق ماڈل ٹاؤن سے نیب کی ٹیم شہباز شریف کی گرفتاری کیلئے جاتی عمرہ روانہ ہوئی،  جاتی عمرہ کے گھر پر چھاپے کی خبر پر ن لیگ کارکن جمع ہوگئے تاہم  نیب ٹیم نہیں پہنچی۔

چند مخصوص شعبے بند رہیں گے بقیہ کھول دیے جائیں گے، وزیراعظم

نیب ٹیم کی آمد سے قبل علاقے کو کورڈن آف کردیا گیا تھا اور کارکنوں کو آگے بڑھنے سے روکنے کیلئے پولیس کی بھاری نفری بھی موجود تھی۔

اطلاعات کے مطابق نیب کی ٹیم میں تین خواتین اہلکار بھی موجود تھیں جبکہ ٹیم کی سربراہی نیب کے ڈپٹی ڈائریکٹر چوہدری محمد اصغر کررہے تھے۔

اطلاع ملتے ہی مسلم لیگ ن کے کارکنان بڑی تعداد میں ماڈل ٹاؤن میں شہباز شریف کی رہائش گاہ کے باہر جمع ہوگئے اور حکومت کیخلاف نعرے بازی کی۔

ن لیگ کے رہنماؤں اور کارکنوں کے ہجوم کی وجہ سے  پولیس سے دھکم پیل بھی ہوئی۔

پاکستانی عوام عمران خان کوگرفتارکرنے بنی گالہ جائے گی، مریم اورنگزیب

مسلم لیگ ن کی رہنما مریم اورنگزیب شہباز شریف کے گھر پر نیب کے چھاپے پر برس پڑیں اور کہا کہ نیب نیازی گٹھ جوڑسے پوری قوم واقف ہے، یہ چینی چوری سے توجہ ہٹانا چاہتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ‘چیئرمین نیب سُن لیں! نیب کی ٹیم شہبازشریف کوگرفتارکرنے آئی ہے تو پاکستانی عوام عمران خان کوگرفتارکرنے بنی گالہ جائے گی’۔

ن لیک کے رہنما ملک احمد خان نے کہا کہ نیب مکمل طورپرسیاسی انتقام کا مظاہرہ کررہا ہے۔

شہباز شریف کی گرفتاری کا کوئی جواز نہیں، عطا تارڈ

مسلم لیگ ن کے رہنما عطا تارڈ کا کہنا ہے کہ شہبازشریف کوگرفتارکرنے کا کوئی جوازنہیں، نیب نے 28 مئی کا دستخط شدہ گرفتاری کا وارنٹ دکھایا گیا۔

عطاتارڑ نے بتایا کہ  شہبازشریف کی گرفتاری کا نہ کوئی اخلاقی جوازہے اورنہ قانونی، ایک کیس میں ایک شخص کی دوبار گرفتاری کیسےممکن ہے؟

 عطا اللہ تارڑ نے کہا کہ آج نیب میں تحریری جواب جمع کرایا، ہم نے نیب کو کہا کہ ہم وڈیو لنک پر موجود ہیں، نیب کو ہر سوال کا تفصیلی جواب جمع کرایا ، ہم ڈٹ کر کھڑے ہیں، آدھی پارٹی حکومت نے بند کی، ہماری آدھی پارٹی تقریباً جیل کاٹ آئی ہے، ہم ڈٹ کر ان کا مقابلہ کریں گے۔

عطا اللہ تارڑ نے کہا کہ پی ٹی آئی کی حکومت سیاسی انتقام لے رہی ہے، نیب اور نیازی کا گٹھ جوڑ سامنے آگیاہے، کل ہائیکورٹ میں 12 بجے شہباز شریف کی درخواست ضمانت پر سماعت ہوگی، تمام قانونی آپشنز دیکھ رہےہیں۔

شہباز شریف کی گرفتاری سے حکومت کا کوئی لینا دینا نہیں، فیاض چوہان

وزیر اطلاعات پنجاب فیاض چوہان کا کہنا ہے کہ نیب کی کارروائی کو وزیراعظم عمران خان سےجوڑنے کی کوشش کی جارہی ہے، نیب احتساب کا آزاد ادارہ ہے، شہبازشریف کی گرفتاری سے وفاقی اورصوبائی حکومت کا کوئی لینا دینا نہیں۔

معلوم نہیں شہباز شریف کہاں ہیں، رانا ثنا اللہ

پاکستان مسلم لیگ ن کے رہنما رانا ثنا نے کہا ہے کہ شہبازشریف کی درخواست کل سماعت کے لیے مقررہوگئی ہے، مجھے معلوم نہیں شہبازشریف کہاں ہیں۔

سکتی ہے۔

(Visited 12 times, 1 visits today)

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں