نیب نے اسحاق ڈار کے خلاف انکوائری کی منظوری دے دی

اسحاق
Loading...

اسلام آباد: نیب نے سابق وزیر خزانہ اسحاق ڈار اور سابق وزیراعلی گلگت بلتستان مہدی شاہ کے خلاف انکوائریوں کی منظوری دے دی۔

قومی احتساب بیورو کے ایگزیکٹوبورڈ کا اجلاس قومی احتساب بیوروکے چئیرمین جسٹس جاوید اقبال کی زیرصدارت ہوا۔ اجلاس میں ڈپٹی چئیرمین نیب، پراسیکیوٹر جنرل اکاؤ نٹبلٹی نیب، ڈی جی آپریشن نیب، ڈی جی نیب راولپنڈی، اور دیگر سینئر افسران نے اجلاس میں شرکت کی۔ قومی احتساب بیورو کے ایگزیکٹو بورڈ کے اجلاس میں 2 ریفرنسز کی منظوری دی۔

پہلے ریفرنس میں نیب نے سابق ڈائریکٹر اسٹیٹ منیجمنٹ سی ڈی اے اسد اللہ فیض، سابق ڈپٹی ڈائریکٹرجنرل اسٹیٹ منیجمنٹ سی ڈی اے شاہد مرتضیٰ بخاری، ڈی اے او اسٹیٹ منیجمنٹ ٹوسی ڈی اے محمد ارشد، سابق اکاؤنٹس آفیسر اسٹیٹ منیجمنٹ سی ڈی اے مقبول احمد ، عطاء الرحمن، سعیدالرحمن، منور احمد اور محمد احمد کے خلاف بدعنوانی کا ریفرنس دائر کرنے کی منظوری دی گئی۔ اسحاق ڈار پر مبینہ طور پر غیرقانونی طور پر کلینک کیلئے مختص پلاٹ کو کمرشل مقاصد کیلئے الاٹ کرنے کا الزام ہے، جس سے قومی خزانے کو 91.964 ملین روپے کا نقصان پہنچا۔

دوسرے ریفرنس میں اے ایس بابر ہاشمی سابق سفیر ایمبیسی آف پاکستا ن صوفیہ،محمد طفیل قاضی،سابق اکاؤٹنٹ ایمبیسی آف پاکستا ن صوفیہ کے خلاف بدعنوانی کا ریفرنس دائر کرنے کی منظوری دی گئی۔ اسحاق ڈار پر مبینہ طور پر سفارتخانہ کے فنڈز میں خردبرد کرنے کا الزام ہے۔ جس سے قومی خزانے کو کروڑوں روپے کا نقصان پہنچا۔

چین کے ترقیاتی ماڈل نے لاکھوں لوگوں کو غربت سے نکال دیا ہے، وزیراعظم

دوسری جانب اجلاس میں (3) انوسٹی گیشنز کی منظوری دی گئی۔ جن میں چیف ایگزیکٹیو آفیسر زرعی ترقیاتی بینک لمیٹڈ سید طلعت محمود اور دیگرکے خلاف(2) انوسٹی گیشنز جبکہ پاکستان سپورٹس بورڈ لیاقت جمنازیم کے افسران اور دیگر کے خلاف انوسٹی گیشن کی منظوری شامل ہے۔

اجلاس میں (7) انکوائریز کی منظوری دی گئی۔ جن میں سابق وزیر خزانہ اسحاق ڈار سابق وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان سید مہدی شاہ، چیف ایگزیکٹیو آفیسر زید ٹی بی ایل سید طلعت محمود اور دیگر وزارت مذہبی امور اور بین المذاہب ہم آہنگی کے افسران اور دیگر، سابق رکن صوبائی اسمبلی پنجاب ملک تنویر اسلم اعوان اور دیگر، نمرا تنویر، راحیلہ اصغر، اصغر نواز، میسرزجیو ماسٹرز پرائیویٹ لمیٹڈ، میسرزجیو ماسٹرانٹر نیشنل لمیٹڈ کی انتظامیہ اوردیگرکے خلاف انکوائریز شامل ہیں۔

Loading...

اجلاس میں ڈاکٹر منظور حسین سومرو سابق چئیرمین پاکستان سائنس فاؤنڈیشن حکومت پاکستان، وزارت سائنس اینڈ ٹیکنالوجی کے افسران /اہلکاران اوردیگرکے خلاف تحقیقات کا معاملہ وزارت سائنس اینڈ ٹیکنالوجی کو بھجوانے کی منظوری دی۔ اجلاس میں وزارت خارجہ کے افسران اور دیگرکے خلاف پاکستان ایمبیسی ٹوکیو جاپان کی عمارت کی فروخت کا معاملہ مزید کارروائی کیلئے وزارت خارجہ کو بھجوا نے کی منظوری دی۔

اجلاس میں سی ڈی اے کے افسران اور دیگر کے خلاف انٹیگریٹیڈ ریسورس منیجمنٹ انفارمیشن سسٹم کے حوالے سے جاری انکوائری متعلقہ کمپنی کی طرف سے منصوبہ مکمل کرنے اور اب تک عدم شواہد کی بنیاد پرقانون کے مطابق بند کرنے کی منظوری دی گئی۔

چئیرمین نیب نے اس متعلق کہا کہ نیب احتساب سب کیلئے کی پالیسی پرسختی سے عمل پیرا ہے۔ ملک سے بدعنوانی کا خاتمہ اورکرپشن فری پاکستان نیب کی اولین ترجیح ہے۔ نیب نے احتساب سب کیلئے کی پالیسی کے تحت 466 ارب روپے بلواسطہ اور بلا واسطہ طور پر بدعنوان عناصر سے برآمد کرکے قومی خزانے میں جمع کروائے۔ نیب کی کارکردگی کو معتبر قومی اور بین الا قوامی اداروں نے سراہا ہے جو نیب کیلئے اعزازکی بات ہے۔ نیب پاکستان کا انسداد بدعنوانی کا قومی ادادرہ ہے۔

چئیرمین نیب کا کہنا تھا کہ نیب کا تعلق کسی سیاسی جماعت، گروہ اور فرد سے نہیں بلکہ صرف اور صرف ریاست پاکستان سے ہے۔ انہوں نے ہدایت کی کہ مفرور اور اشتہاری ملزمان کی گرفتاری کے لئے قانو ن کے مطابق تمام وسائل بروئے کار لائے جائیں تاکہ بدعنوان عناصر کو انصاف کے کٹہرے میں کھڑا جا سکے۔ چیئرمین نیب نے ہدایت کی کہ شکایات کی جانچ پڑتال، انکوائریاں اور انوسٹی گیشنز مقررہ وقت کے اندر قانون کے مطابق منطقی انجام تک پہنچانے کے علاوہ انوسٹی گیشن اورپراسیکوٹرز پوری تیاری کے ساتھ معزز عدالتوں میں مقدمات کی پیروی کریں تاکہ بدعنوان عناصر کو قانون کے مطابق سزا دلوائی جاسکے۔

(Visited 33 times, 1 visits today)
Loading...
Advertisements

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں