عالمی ادارہ صحت کا تمام ممالک کو اہم مشورہ

جینیوا: عالمی ادارہ صحت کے سربراہ ڈاکٹر ٹیڈروس نے کرونا وائرس سے متاثرہ ممالک کو مشورہ دیا ہے کہ وہ ایسی پالیسی بنائیں کہ کمائی سے محروم افراد کو معاشی تحفظ ملے۔

تفصیلات کے مطابق سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنے ٹوئٹ میں عالمی ادارہ صحت کے سربراہ نے لاک ڈاؤن سے متاثر ہونے والے غریب طبقے کی طرف نشان دہی کی اور ان کی مدد کے لیے حکومتی توجہ مبذول کروائی۔

انہوں نے کہا کہ ممالک ایسی پالیسی بنائیں کہ کمائی سے محروم افراد کو معاشی تحفظ ملے، خود غربت میں پلا بڑھا ہوں اس حقیقت کو سمجھتا ہوں، مستقل آمدنی نہ رکھنے والے معاشرتی پالیسیوں کے مستحق ہیں۔

اقوام متحدہ کے کتنے ملازمین کرونا وائرس کا شکار ہیں ….؟

ڈاکٹر ٹیڈروس کا کہنا تھا کہ ایسی معاشرتی پالیسیاں بنائیں کہ ان کی تعظیم بھی کی جائے۔

یاد رہے کہ کرونا وائرس ایشیائی ملک چین سے ہی پھیلنا شروع ہوا جو اب دنیا کے 190 سے زائد ممالک میں پہنچ چکا ہے اور اب

تک اس سے 38 ہزار 743 اموات ہوچکی ہیں۔

کرونا وائرس نے اب تک 8 لاکھ ایک ہزار 400 سے زائد لوگوں کو متاثر کیا جن میں سے 1 لاکھ 72 ہزار 657 صحت یاب بھی ہوئے جبکہ پانچ ہزار کے قریب مریضوں کی حالت بدستور تشویشناک ہے۔

(Visited 31 times, 1 visits today)

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں