کرونا وائرس سے بچنے کے لیے اس چیز کا استعمال کریں ….!

کرونا وائرس ابھی تک دنیا بھر میں بہت تیزی سے پھیل رہا ہے دنیا بھر کے ماہرین کرونا وائرس کی ویکسین بنانے میں مصروف ہیں.

برطانیہ کے ایک سائنسدان نے یہ دعوی کیا ہے کہ کرونا وائرس پلاسٹک اور فولاد پر تقریبا تین سے چار دن تک زندہ رہ سکتا ہے. لیکن کرونا وائرس تانبے کی سطح پر صرف چار گھنٹے میں ہی ختم ہو جاتا ہے .

سائنسدان نے لوگوں کو مشورہ دیا ہے کہ وہ اپنے گھر کے دروازے کھڑکیوں اور سیڑھیوں کی ریلنگ میں تانبے کا استعمال کریں تاکہ کرونا وائرس سے بچ سکیں کیونکہ تانبا اس کو چار گھنٹے میں ختم کر دیتا ہے.

ماہرین کا کہنا ہے کہ جب کرونا وائرس تانبے کی سطح پر گرتا ہے تو تانبے میں موجود دھاتی آئن اس پر حملہ کرکے اس کو تباہ کر دیتا ہے اور اس سے وائرس کا ڈی این اے بھی ختم ہو جاتا ہے .

loading...

کرونا وائرس کے مریضوں کو کئی ماہ تک اس مسئلے کا سامنا رہ سکتا ہے….!

سائنسدانوں کے اس دعوے کو مدنظر رکھتے ہوئے پولینڈ میں عوامی ٹرانسپورٹ میں تانبے کا استعمال کیا جارہا ہے. عوامی بسوں کے ڈنڈے اور کرسیوں پر تانبے کی دھات چڑھا دی گئی ہے تاکہ لوگ کرونا وائرس سے بچ سکیں.

پرانے زمانے میں لوگ تانبے کے برتنوں میں کھانا کھایا کرتے تھے شاید وہ اسی لیے بیماریوں سے محفوظ رہتے تھے اور اب سائنسدان لوگوں کو مشورہ دے رہے ہیں کہ وہ پلاسٹک اور شیشے کے برتن استعمال کرنے کی بجائے تانبے کے برتنوں کا استعمال کریں تاکہ وائرس سے محفوظ رہ سکیں

(Visited 34 times, 1 visits today)

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں