کیا مصنوعی اینٹی باڈیز سے کرونا کے مریضوں کا علاج ہو سکے گا ….؟

Loading...

    امریکن ماہرین نے یہ دعوی کیا ہے کہ انہوں نے کرونا وائرس کے خلاف مصنوعی اینٹی باڈیز تیار کرلی ہے. یہ اینٹی باڈیز کرونا کے مریضوں کے لئے ڈھال بن سکتی ہیں اور ان کا علاج کیا جا سکتا ہے.

    لیکن ابھی ان مصنوعی اینٹی باڈیز کا تجربہ چوہوں پر کیا جا رہا ہے اور اگر تجربے میں کامیابی حاصل ہوئی تو اس یہ باقاعدہ طور کرونا وائرس کے مریضوں کے علاج کے لئے استعمال کی جائیں گی.

    لیکن اس میں چند سال لگ سکتے ہیں ان ماہرین کا کہنا ہے کہ ہم نے کرونا وائرس کی تمام علامتوں کو مدنظر رکھتے ہوئے یہ اینٹی باڈیز تیار کی ہیں.

    loading...

    سب ماہرین ہی یہ بات جانتے ہیں کہ انسان کی سانس کی نالی اور پھیپھڑوں کی سطح پر ایک خاص قسم کا انزائم موجود ہوتا ہے. یہ انزائم عام حالت میں تو انسان کے لئے مفید ہوتا ہے لیکن کرونا وائرس کو انسان کے جسم میں داخل ہونے کے لیے راستہ بھی یہی انزائم فراہم کرتا ہے.

    کرونا وائرس کو شکست دینے والے یہ ضرور پڑھ لیں …..!

    کرونا وائرس میں کچھ خاص قسم کے پروٹینی ابھار پائے جاتے ہیں جو ہمارے سانس کی نالی میں موجود انزائم کے ساتھ مل جاتے ہیں اور کرونا وائرس کو جسم میں داخل ہونے کا راستہ مل جاتا ہے.

    ماہرین کا دعویٰ ہے کہ انہوں نے ان تمام باتوں کو مد نظر رکھ کر مصنوعی اینٹی باڈیز کو تیار کیا ہے اور اگر ہمیں تجربات میں کامیابی ملتی ہے تو جتنی جلدی ممکن ہو سکا ہم انسانوں پر اس کا تجربہ کریں گے اور اسے جلد از جلد مارکیٹ میں لانے کی کوشش کی جائے گی.

    (Visited 41 times, 1 visits today)
    Loading...
    Advertisements

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں