بھارت سے آنے والی 2 خواتین میں کورونا کی تصدیق

 

لاہور: بھارت سے 2 روز قبل واپس آنے والے 41 پاکستانیوں میں سے 2 خواتین کے کورونا ٹیسٹ مثبت آئے ہیں جس کے بعد انہیں ایکسپو سینٹر قرنطینہ منتقل کردیا گیا ہے۔

جمعرات کے روز بھارت سے واہگہ بارڈر کے راستے واپس پاکستان آنے والے 41 شہریوں میں ساندہ روڈ لاہور کی رہائشی دو خواتین 57 سالہ حمیداں بانو اور ان کی بیٹی 32 سالہ مائدہ رحمان بھی شامل ہیں جن کے کورونا ٹیسٹ پازیٹو آگئے ہیں۔

بھارت میں پھنسے پاکستانیوں کو واپس لانے کے لیے خصوصی طورپر واہگہ اٹاری بارڈر کھولا گیا تھا۔ بھارت سے واپس پاکستان پہنچنے والے 41 افراد میں سے 34 افراد کو ایکسپو سینٹر جب کہ 7 افراد کو شیخ زائد اسپتال میں قرنطینہ میں منتقل کر دیا گیا تھا،

ان افراد کے کورونا ٹیسٹ پنجاب فرانزک سائنس ایجنسی ٹھوکر نیاز بیگ لاہور سے کروائے گئے بھارت سے آنے والے باقی 39 افراد کے ٹیسٹ ابتدائی طور پر منفی آئے ہیں تاہم انہیں قرنطینہ میں ہی رکھا جائے گا۔

دوسری طرف ان افراد کے کورونا ٹیسٹ پازیٹو آنے کے بعد واہگہ اور اٹاری امیگریشن سنٹرز پر تعینات عملے میں تشویش پھیل گئی ہے،

سندھ حکومت کا 10 ہزار بیڈز پر مشتمل آئسولیشن سینٹرز قائم کرنے کا فیصلہ

ذرائع کے مطابق جس روز پاکستانی واپسی آئے تھے ان کی امیگریشن ، کسٹم کلیئرنس کرنیوالے عملے کے بھی کورونا ٹیسٹ کروانے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ جبکہ دہلی، ہریانہ، اترپردیش اور پنجاب سے پاکستانی شہریوں کو اٹاری واہگہ بارڈر تک لیکر آنیوالی گاڑیوں کے ڈرائیوزکا ٹیسٹ کروایا جائیگا۔

اس سے قبل 30 مارچ کو بھی بھارت میں علاج کے لئے جانیوالے پانچ پاکستانی واپس لوٹے تھے جن میں سے تین میں کورونا وائرس کی تشخیص ہوئی تھی۔

Leave a Reply