مومن کی صفات کیا ہیں؟

مومن

مومن کی تعریف کیا ہے؟
مومن وہ ہے جس میں صفت ایمان پائی جائے اور اس کا قلب و باطن اللہ کے حضور اس طرح جھک جائے کہ اس کے دل میں خدا اور اس کے رسول صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم سے متعلق کوئی ادنی درجے کا وہم یا شک بھی موجود نہ ہو۔

مومن کبھی تکبر نہیں کرتا

اس دنیا میں جو بھی انسان آیا ہے اس نے ایک دن اس دنیا کو چھوڑ کر جانا ہے۔ ہر شخص کو ددولت سے نوازنے والی ذات طرف اللہ کی ہےاور اگر وہ اس میں تکبر کرے تو وہ اللہ کو سخت نہ پسند ہے اور اللہ کے قریب اسکا بہت سخت عذاب ہے اگر اسکی ذات کسی کو دولت دیتی ہے تو وہ کل اس سے چھین بھی سکتی ہےلہذا اسے چاہیے کہ وہ تکبر نہ کرئے اور اللہ کہ راہ میں خرچ کرے۔

جاہل سے بحث نہ کرنا

اگر کوئی مومن بندہ کسی جاہل سے ٹکر جائے اور وہ اس سے کو ئی فضول بات کرنے لگ جائے۔ تو مومن کو چاہیے کہ وہ اسے سمجھائے اور اگر وہ شخص پھر بھی نہ سمجھے تو مومن کو چاہیے کہ بس وہ اس کو سلام کرے اور بغیر بات کیے چلا جائے کیونکے ایک جاہل کو سمجھانا نا ممکن سی بات ہے۔

صرف اللہ کی عبادت کرنا

قرآن میں صرف اللہ کی عبادت کا حکم دیا گیا ہے اور اللہ ہر جگہ موجود ہے اور انسان کی شاہ رگ سے بھی قریب ہے ۔ ہمیں ہمیشہ اللہ سے ہی مدد مانگنی چاہیے اگر کسی انسان سے مانگے گے تو صرف ذلیل ورسوا ہی ہونگے اور ہمارا خدا ہمیں (70) ماوں سے بھی زیادہ پیار کرتا ہے اور اپنے بندے کو کسی بھی حال میں نہیں چھوڑتا۔

میرا جسم میری مرضی

رات کا قیام کرنا

انسان دن میں پانچ مرتبہ نماز پڑھتا ہے اور ہر نماز میں اللہ کو سجدہ کرتا ہے اور اللہ رات کے وقت زمین کے قریب ہوتے ہیں اور انسان رات کو جاگ جاگ کر قیام کرتا ہے اور تہجد کی نماز ادا کرتا ہے اور اللہ سے اپنے دکھ درد کی دعا کرتا ہے اور جو مدد اللہ کرتا ہے وہ کوئی عام انسان نہیں کر سکتا ۔

فضول خرچی نہ کرنا

جو شخص فضول خرچی کرتا ہے اسے شیطان کا بھائی کہا جاتا ہے اور اس سے قیامت کے دن بھی بہت سخت حساب ہوگا۔ کہ یہ پیسا کہا خرچ کیا تو اسکو چاہیے کہ حساب سے خرچ کرے۔ ذیادہ فضول خرچی نہ کرے اور اس جگہ پیسا لگائے جہاں کوئی فائدہ بھی ہو اور اس پیسے سے غریب لوگوں کی مدد بھی کرے۔

زنا نہ کرنا

زنا ایک بہت بڑا گناہ ہے جسکی اسلام میں بہت سخت سزا ہے اورجو شخص کسی غیر محرم کے ساتھ ایسا کرتا ہے تو وہ اسکا قصور نہیں اسکے ماں باپ کا قصور ہوتا ہے۔ یعنی انھوں نے اسکی اچھی تربیت نہیں کی اور وہ اسی وجہ سے غلط راہ پر چل پڑتے ہیں۔ اسکے لیے لازمی ہے کہ انسان کی جلد شادی کرا دی جائے۔ تا کہ وہ غلط کاموں سے بچے۔ ایک مرد اور عورت دوںو ں کی آنکھوں میں ایک دوسرے کے لیے حیا ہونی چاہیے۔

مومن کا ہر وقت اللہ سے معافی مانگنا

اگر کوئی شخص سچے دل سے معافی مانگے تو اللہ اسکو معاف کردیتا ہے اور اگر کوئی شخص گناہ کرے تو گناہ کے بعد تین دن کی مہلت ہوتی ہے۔ اگر وہ معافی نہیں مانگتا تو وہ گناہ اس کے نامہ عمال میں لکھ دیا جاتا ہے۔ لہذا ہمیں اپنے تھوڑے سے مزے کے لیے گناہ نہیں کرنا چاہیے کیونکے وہ مزہ تو تھوڑی دیر کا ہو گا اور پھر ختم ہو جایگا لیکن اس مزے کے ساتھ جو گناہ اپنے ساتھ رکھ لیا ہے وہ اسے جہنم تک لے کر جایگا۔ اگر کوئی شخص گناہ کے راستے پر چلتا ہے تو وہ ذلیل و خوار ہوتا ہے۔

(Visited 107 times, 1 visits today)

Comments

comments

صفات, مومن, مومنوں کی صفات,

اپنا تبصرہ بھیجیں