اس بلڈ گروپ کے لوگوں کو کرونا سے زیادہ خطرہ ہے …!

عالمگیر وبا 213 ممالک کو لپیٹ میں لے چکی ہے، کرونا وائرس سے ہلاک ہونے والوں کی تعداد 3 لاکھ 98 ہزار 244 ہو گئی ہے، وائرس سے اب تک 68 لاکھ 50 ہزار افراد متاثر ہو چکے ہیں۔

ماہرین نے دعویٰ کیا ہے کہ ایک خاص بلڈ گروپ رکھنے والے لوگ کرونا وائرس سے جلدی اور شدید متاثر ہو سکتے ہیں. تفصیلات کے مطابق ناروے کے ماہرین میں ایک رپورٹ جاری کی ہے اس رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ ایک خاص بلڈ گروپ سے تعلق رکھنے والے لوگوں کو کرونا وائرس سے زیادہ خطرہ ہے.

ناروے کے ماہرین کی تحقیق کے مطابق جن لوگوں کا بلڈ گروپ اے ہے ان لوگوں کو دوسرے افراد کی نسبت کرونا وائرس سے زیادہ خطرہ ہو سکتا ہے. ماہرین کا کہنا ہے کہ ہماری تحقیق کے مطابق اے بلڈ گروپ رکھنے والے لوگوں کو آکسیجن کی کمی کی صورت میں وینٹی لیٹر کا سامنا بھی کرنا پڑ سکتا ہے.

loading...

ماہرین کا کہنا ہے کہ ہم اب تک یہ نہیں معلوم کرسکے کہ بلڈ گروپ یا بلڈ گروپ سے منسلک کچھ جینیاتی عناصر بھی خطرے کئ وجہ بن سکتے ہیں. تحقیقی عمل میں ماہرین نے اٹلی اور اسپین کے ہسپتالوں میں داخل مریضوں کے خون کے نمونے لیے یہ تمام وہ مریض تھے جن کو وینٹی لیٹر کی ضرورت پڑی تھی.

کرونا وائرس سے بچنے کے لیے اس چیز کا استعمال کریں ….!

ماہرین نے ان مریضوں کے خون میں سے ڈی این اے کو اکٹھا کرکے اسکین کیا اور ایسے افراد کے خون کے نمونوں اس کا موازنہ کیا جو کرونا وائرس کا شکار نہیں تھے. تاکہ یہ دیکھ سکیں کہ ان میں کسی قسم کا جینیاتی کوڈ مشترکہ تو نہیں ہے. موازنہ کرنے کے بعد ماہرین نے بتایا کہ اے بلڈ گروپ سے تعلق رکھنے والے لوگوں کو اس بیماری کا سنگین خطرہ ہے.

(Visited 70 times, 1 visits today)

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں