کرونا سے بچنے کے لئے ڈنمارک میں کس جانور کو مارا جارہا ہے…؟؟

ڈنمارک
Loading...

کوپن ہیگن: ڈنمارک کرونا وائرس سے بچنے کے لئے ایک کروڑ 70 لاکھ سمُور تلف کرے گا۔

بین الاقوامی میڈیا رپورٹ کے مطابق ڈنمارک کی حکومت کا منصوبہ ہے کہ کرونا وائرس کی جینیاتی طور پر تبدیل شدہ قسم کے پھیلاؤ کی تصدیق کے بعد پشمینہ کی کھالوں یا پوستین کے ملک بھر میں موجود فارمز پر تمام 1 کروڑ 70 لاکھ سمُور تلف کر دیئے جائیں۔

وزیر اعظم میٹے فریڈیرِکسن نے کہا کہ سمُوروں میں موجود وائرس کے باعث بارہ افراد متاثر ہوئے، اس طرح کے واقعات کرونا وائرس کی ویکسین کی افادیت کو کم کر سکتے ہے، جو ابھی تیاری کے مراحل سے گزر رہی ہیں، اس لئے سموروں کو تلف کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

Loading...

پرانے دور میں عورت کو اس معمولی بات پر جانور بنا دیا جاتا تھا…؟

دارالحکومت کوپن ہیگن کے مضافات میں واقع سموروں کے فارم پر کام کرنے والے کارکن کا کہنا تھا کہ گوشت خور جانور کو تلف کرنے کا عمل جمعرات سے شروع کردیا جائے گا، کارکن کا کہنا تھا کہ اگرچہ سمور اس وائرس سے متاثر نہیں ہوئے پھر بھی فارم کو ان کی تلفی کا عمل جلد از جلد مکمل کرنا ہے، پورا ریوڑ تلف ہونے سے کاروبار کو بڑا دھچکا لگے گا۔

سمور گوشت خور جانور ہے، اس کی مادہ 30 سے 40 سینٹی میٹر لمبی ہوتی ہے جبکہ نر کی جسامت اس سے دوگنا ہوتی ہے، اس کی قیمتی فر کیلئے بڑے بڑے فارموں میں پالا جاتا ہے۔

(Visited 30 times, 1 visits today)
Loading...
Advertisements

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں