خاتون نے ایک سال میں 68 کلو وزن کم کرلیا..!

وزن

ایک خاتون نے اپنے جسمانی وزن کو 2 عام تبدیلیوں کے ساتھ لگ بھگ 50 فیصد اس وقت کم کیا جب اسے گلی میں اجنبی افراد کی جانب سے موٹاپے کے باعث مذاق کا نشانہ بنایا گیا۔

برطانوی روزنامے مرر کی رپورٹ کے مطابق 30 سالہ سارہ واس کا وزن جنک فوڈ کے شوق اور ورزش سے دوری کے باعث 158 کلوگرام سے زیادہ ہوگیا تھا۔

جسمانی وزن زیادہ ہونے پر خاتون کو لوگوں کی جانب سے مذاق کا نشانہ بنایا جاتا اور لوگوں انہیں دیکھ کر فقرے کستے۔

لڑکا یا لڑکی شادی کرنے کے قابل ہے یا نہیں کیسے معلوم کریں..؟

ان کا کہنا تھا ‘میں جب باہر گئی تو اجنبی افراد نے مجھے موٹی گائے کہا اور جب لوگ مجھے گھورتے تو مجھے بہت برا لگتا’۔

انہوں نے مزید بتایا ‘ایسا وقت آگیا تھا جب مجھے باہر جانا اچھا نہیں لگتا تھا اور میں اپنے گھر میں بند رہنے کی عادی ہوگئی تھی، جہاں تک ممکن ہوتا میں باہر جانے سے گریز کرتی، مگر یہ وزن میری وجہ سے ہی بڑا تھا، میری غذا اچھی نہیں تھی اور ورزش بھی نہیں کرتی تھی۔ مجھے چلنے میں مشکل کا سامنا ہوتا تھا جبکہ سانس بہت جلد پھول جاتی تھی’۔

ویسٹ یارک شائر کی رہائشی خاتون نے پھر اپنی زندگی بدلنے کا فیصلہ کیا اور سب سے پہلے باہر کے کھانوں کو چھوڑدیا۔

loading...

انہوں نے بتایا کہ میں نے جنک فوڈ کو استعمال روک دیا، گھر میں صحت بخش غذائیں پکانے لگی اور ورزش شروع کردی۔

وہ دن بھر میں 3 میل تک چہل قدمی کرتیں، جم جاتیں اور ایکوافٹ کلاس میں جانا شروع کردیا اور ایک سال میں انہوں نے لگ بھگ 50 فیصد وزن یعنی 68 کلو وزن کم کرلیا۔

جبکہ اپنی 30 ویں سالگرہ تک 76 کلو وزن کم کرنے کا ہدف طے کیا تھا اور اس کو حاصل بھی کرلیا اور اس موقع پر ایک فیشن ایبل لباس کو خریدا جو اس سے قبل اپنے وزن کی وجہ سے وہ پہننے کا سوچ بھی نہیں سکتی تھیں۔

ان کی 5 سالہ بیٹی کو بھی ماں کے نئے صحت مندانہ طرز زندگی سے فائدہ ہورہا ہے۔

انہوں نے بتایا ‘لوگ سوچتے ہیں کہ میں نے وزن میں کمی کے لیے سرجری کرائی اور وہ مجھے پہچان نہیں پاتے، میری صحت اب بہتر ہوگئی ہے، توانائی زیادہ محسوس ہوتی ہے اور میں اپنی بیٹی کے لیے بہت کچھ کرنے کے قابل ہوگئی ہوں، پہلے میں صوفے پر بیٹھ جاتی تو ہلتی نہیں تھی اور بیٹی کو بھی اس وجہ سے گھر میں قید رہنا پڑتا تھا’۔

(Visited 496 times, 1 visits today)

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں