7 احمقانہ ورلڈ ریکارڈ جو موت کی وجہ بنے

ورلڈ ریکارڈ
Loading...

انسانی فطرت ہے کہ انسان دنوں میں ہی بے پناہ شہرت حاصل کرنا چاہتا ہے۔ شہرت بھی ایک نشہ ہے، کچھ لوگ شہرت یا مقبولیت حاصل کرنے کے لئے دن رات ایک کر دیتے ہیں جبکہ کچھ لوگ ایسے بھی ہوتے ہیں جو مشہور ہونے کے لئے احمقانہ ورلڈ ریکارڈ یا مزاحقہ خیز حرکتیں کرتے ہیں۔

ایسے لوگ اکثر احمقانہ ورلڈ ریکارڈ قائم کرتے کرتے جان کی بازی بھی ہار جاتے ہیں۔آج ہم آپ کو سات ایسے ہی ریکارڈز کے بارے میں بتائیں جنہیں سرانجام دیتے دیتے لوگ موت کے منہ میں جا گرے۔

1۔ سیلنڈرا ناتھ رائے

انڈیا سے تعلق رکھنے والا یہ انسان ایک مشہور اسٹنٹ میں تھا جسے خطروں سے کھیلنے کا شوق جنون کی حد تک تھا۔دیکھنے میں جسمانی طور بہت مضبوط انسان تھا اور اس کت سر کے بال بھی بہت لمبے تھے۔

ورلڈ ریکارڈ
Photo: File

ایک دن بالوں کی مدد سے اس نے زیپ کے ذرئعے لمبا ترین سفر کرنے کا ریکارڈ بنانا چاہا، ابھی آدھا ہی کیا تھا کہ اسے سخت قسم کا ہارٹ اٹیک ہوا جس کی وجہ سے فوری موت ہو گئی۔ اسے مردہ حالت میں وائرز سے اتارا گیا،لائیو دیکھنے والوں کی بے ساختہ چینخیں نکل گئیں۔

2۔ ہارث سلیمان

پاکستان سے تعلق رکھنے والا یہ شخص امریکن نیشنل تھا۔اس نے کم عمری میں صرف 30 دن کے اندر پوری دنیا کا جہاز پر چکر لگانے کا فیصلہ کیا۔ہارث دراصل تعلیم کو پروموٹ کرنے لئے یہ کرنا چاہتا تھا۔

ورلڈ ریکارڈ
Photo: File

ہارث اور اس کا باپ 19 جون 2014 کو امریکن ریاست انڈیانا سے روانہ ہوئے، انہیں 42 ہزار کلومیٹر کا فاصلہ طہ کرنا تھا۔یہ اپنا زیادہ تر سفر طہ کر ہی چکے تھے مگر بدقسمتی سے ان کا جہاز تباہ ہو گیا جس کی وجہ سے دونوں کی موت ہو گئی۔

گوگل کی بارہویں جماعت کے طالب علم کو کروڑوں روپے تنخواہ کی پیشکش

3۔ جیسیکا ڈوبروف

اس کم سن بچی کا تعلق امریکہ سے تھا یہ سات سال کی ٹرینی پائیلٹ تھی جس نے نہایت کم عمری میں جہاز اڑانے کا فیصلہ کیا۔یہ کم عمر ترین پائیلٹ کا اعزاز لینا چاہتی تھی۔ سنہ 1996 میں یہ اپنے انسٹرکٹر اور باپ کےساتھ جہاز میں سوار تھی،بد قسمتی سے موسم بہت خراب تھا۔

Loading...
ورلڈ ریکارڈ
Photo: File

خراب موسم جہاز اڑانے کے لئے بالکل موزوں نہیں تھا مگر جیسیکا اس دن جہاز اڑانے کے لئے بضد تھی۔جب جہاز ٹیک آف کے قریب پہنچا تو جہاز پھسل گیا اور تباہ ہو گیا۔جہاز میں موجود تینوں لوگ اور دیگر عملہ موقع پر ہلاک ہو گیا۔

4۔ جان فرانسسکو گولوریم

ایک سائکلسٹ کی حیثیت سے اس انسان نے پانچ براعظموں کو سر کرنے کا فیصلہ کیا۔یہ فاصلہ پانچ سالوں میں طہ کیا جانا تھا،مکمل فاصلہ 2 لاکھ پچاس ہزار کلومیٹر تھا۔ان پانچ سالوں کا زیادہ تر حصہ یہ مکمل کر چکے تھے اور آخری مراحل میں تھے۔ ایک دن میکون راچا سیما پرووینس میں واقع ایک ہائی وے پر سائکل چلا رہے تھے کہ ایک تیز رفتار ٹرک کی ٹکر نے ان کی جان لے لی۔

5۔ڈیانا پیرس

چھیالیس سالہ جرمن سکائی ڈائیورڈیانا پیرس بھی ورلڈ ریکارڈ بنانے کے چکر میں جان کی بازی ہار گئیں۔ڈیانا نے 2 سو بائیس لوگوں کے ساتھ اکٹھے چلانگ لگانے کا فیصلہ کیا، یہ

ورلڈ ریکارڈ
Photo: File

دنیا کا سب سے بڑا مجمع تھا۔ انہوں نے جہاز سے کودتے ہوئے اکتھے پیر شوٹ کھولنا تھا لیکن بد قسمتی سے ڈیانا کا پیراشوٹ نہ کھل سکا اور یہ لقمہ اجل بن گئیں۔

6۔ جواد پیلزبانین

44 سالہ ایرانی بھی ورلڈ ریکارڈ بنانے میں اپنی جان سے ہاتھ دھو بیٹھا۔ جواد ایک خطرناک موٹر سائکلسٹ تھا جس نے 2005 میں موٹر سائکل پر لانگ ڈسٹنس جمپ لگا کر دنیا کو حیران کرنے کا فیصلہ کیا۔یہ جمپ بائیس بسوں کے اوپر سے لگایا جانا تھا، اس جمپ کا فاصلہ 209 فٹ تک پھیل گیا۔بد قسمتی سے جواد صرف تیرہ بسوں کو ہی عبور کر پایا اور گر کر برے طریقے سے زخمی ہو گیا۔ زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے جواد زندگی کی بازی ہار گیا۔

7۔ جناکا بیسنائک

سری لنکا سے تعلق رکھنے والے اس انسان کی عمر صرف چوبیس سال تھی۔اس نے زندہ درگور ہونے کا ریکارڈ قائم کرنے کی کوشش کی۔اسے دس فٹ کے ایک گڑھے میں مٹی ڈال کر دبا دیا گیا۔

ورلڈ ریکارڈ
Photo: File

اس نے دم گھٹنے سے بچنے کے لئے لکڑی کے ایک چیمبر میں پناہ لے لی۔جب کھودائی کر کے اسے نکالا گیا تو یہ مکمل بے ہوش تھا، ڈاکٹرز کے پاس پہنچے تو یہ بھی موت کے گھاٹ اتر چکا تھا۔

(Visited 18 times, 1 visits today)
loading...
Advertisements

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں