گول گپوں کے شوقین افراد کے لیے بری خبر!

گول گپے
Loading...

نئی دہلی: بھارتی شہر کانپور کی انتظامیہ نے گول گپوں کو کرونا وائرس کے پھیلاؤ کی وجہ قرار دیتے ہوئے شہر میں اس کی فروخت پر پابندی عائد کردی۔

بھارتی میڈیا کے مطابق گول گپے یا پانی پوری پورے بھارت میں نہایت شوق سے کھائی جانے والی ایک شے ہے اور کرونا وائرس کا لاک ڈاؤن نرم ہوتے ہی لوگوں نے اسے کھانے کے لیے ٹھیلوں کا رخ کرلیا ہے۔

مقامی انتظامیہ کے مطابق گول گپے کے ٹھیلوں پر رش اور سماجی فاصلے نہ ہونے کی وجہ سے یہ ٹھیلے کرونا وائرس کے پھیلاؤ کا گڑھ بن سکتے ہیں۔

یہی وجہ ہے کہ مقامی انتظامیہ نے گول گپوں کی فروخت اور ٹھیلوں کو بند کردیا ہے۔

loading...

مقامی انتظامیہ کا کہنا ہے کہ گول گپوں سمیت ٹھیلوں پر دیگر اشیا فروخت کرنے والے احتیاطی تدابیر کا بھی خیال نہیں رکھ رہے اور نہ ہی ماسک اور دستانوں کا استعمال کر رہے ہیں۔

دنیا کے مشہور دریا جہاں اب بھی سونا پایا جاتا ہے…!

علاوہ ازیں ٹھیلے والے کھانے پینے کی اشیا بناتے ہوئے صفائی ستھرائی کا خیال بھی نہیں رکھ رہے جس کی وجہ سے کرونا وائرس کے مزید پھیلاؤ کا خدشہ ہے۔

انتظامیہ نے لوگوں کو ہدایت کی ہے کہ وہ باہر کے غیر معیاری گول گپے کھانے کے بجائے انہیں گھر میں ہی تیار کرلیں۔

(Visited 81 times, 1 visits today)
Loading...
Advertisements

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں