12 اگست: (کیلیگرافی) خطاطی کا عالمی دن

خطاطی
Loading...

تحریری شکل میں خطاطی ایک آرٹ ہے۔ اس آرٹ پر صدیوں سے کام ہو رہا ہے لیکن جدید دور میں خطاطی کو اشتہارات کے فروغ اور ان میں مختلف ڈیزائن بنانے کے لئے استعمال کیا جاتا ہے۔

پرانے زمانے میں یہ کام ہاتھ سے کیا جاتا تھا اب ٹیکنالوجی نے بہت آسانیاں پیدا کر دیں ہیں۔ لوگ مختلف سافٹ ویئرز کو استعمال کر کے اپنی آرٹ کو مزید خوب سے خوب تر بناتے ہیں۔ خطاطی کی ایک وسیع تاریخ ہے اس کا دور دنیا میں سب سے زیادہ رہا ہے۔یہ ایک ایسا فن پارہ رہا ہے جو تاریخ میں ضروری نکات کی نشاندہی کرتا ہے۔ چینی ،مصری اور قدیم مغربی تہذیب سب نے اپنی اپنی ثقافت سے خطاطی کی مختلف طرزین حاصل کیں ہیں۔

مغربی تہذیبوں کی زیادہ تر خطاطی لاطینی زبان میں ہے کیونکہ گرجا گھروں میں اسی زبان میں تعلیم دی جاتی تھی۔ اسی طرح اسلام میں بھی آرٹ کو پیدا کرنے کے لئے قرآن پاک کی آیات مبارکہ کا استعمال کیا جاتا ہے۔ اس آرٹ کو استعمال کر کے میڈیا میں بھی کافی تبدیلیاں دیکھنے کو ملیں ہیں۔

loading...
خطاطی
Photo: File

اس مخصوص فن نے خود کو روحانیت سے جوڑا اور مسلم دنیا میں ڈیزائن آرٹ کی مثال قائم کر دی۔ دنیا میں تمام مشہور مساجد، مزارات، عمارتوں اور مذہبی اہمیت کی یادگاروں کی چھتیں بیرونی، داخلی اور گنبدوں کو خطاطی سے سجایا جاتا ہے۔

پاکستانی ٹی وی ڈرامے بے روح کیوں ….؟

پاکستان میں بہترین خطاطی کے ماہر ناموں میں اسماعیل گلگیز، احمد خان، اصغر علی اور سید صادقین احمد شامل ہیں۔ سید صادقین احمد نقوی، تمغہ امتیاز، پرائیڈ آف پرفارمنس، ستارہ امتیاز ایک عالمی شہرت یافتہ پاکستانی فنکار تھے، جو خطاط اور مصوری کی حیثیت سے اپنی صلاحیتوں کے سبب مشہور ہوئے۔ ان کی بدولت پاکستان دنیا کے ان ممالک میں شامل ہوا جہاں تانبے پر خطاطی کی جاتی ہے۔

خطاطی
Photo: File
خطاطی
Photo: File

خطاطی کا عالمی دن ماہرین اور اس فن کو سیکھنے والے طلباء کو اکٹھے مل بیٹھنے اور اپنے تجربات کو بانٹنے کے لئے منایا جاتا ہے۔ یہ دن اس لئے بھی منایا جاتا ہے کہ لوگوں کو اس فن کے بارے معلومات مہیا کی جائیں۔

(Visited 24 times, 1 visits today)
Loading...
Advertisements

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں