کشمور سانحے پر صدمے کی کیفیت ہے اور دل گرفتہ ہے، سراج الحق

Loading...

لاہور: امیر جماعت اسلامی پاکستان سراج الحق نے سانحہ کشمور پر کہا ہے کہ جنسی زیادتیوں کو روکنے کا واحد حل سزائے موت ہے۔

زیادتی کے ملزم کو گرفتار کرنے والے پولیس اہلکار کے لیے اعلیٰ ایوارڈ کی سفارش کریں گے، مرتضیٰ وہاب

سراج الحق نے ٹوئٹ کرتے ہوئے کہا کہ کشمور سانحے پر صدمے کی کیفیت ہے اور دل گرفتہ ہے، ایسے دلدوز اور شرمناک واقعات مسلسل ہو رہے ہیں جو ہمارے نظام حکومت و انصاف پر سوالیہ نشان ہے

سراج الحق نے کہا کہ جماعت اسلامی نے ایسے مجرموں کےلیے زینب الرٹ بل میں سزائے موت تجویز کی تھی لیکن اس کی مخالفت کی گئی، حالانکہ سزائے موت ہی اس جرم کو روکنے کا واحد حل ہے۔

واضح رہے کہ سندھ کے علاقے کشمور میں 4 سالہ بچی سے اجتماعی زیادتی کا لرزہ خیز واقعہ پیش آیا جس نے ہر شہری کو لرزا کر رکھا دیا۔

loading...

کراچی کی رہائشی تبسم بی بی کو نوکری کا جھانسہ دے کر کشمور لے جایا گیا جہاں پہلے اس کے ساتھ اور پھر اس کی 4 سالہ بیٹی کے ساتھ اجتماعی زیادتی کی گئی۔

معصوم بچی پر وحشیانہ اور بہیمانہ تشدد کیا گیا کہ اس کے پیٹ کی آنت بھی نکل آئی، اس کے دانت توڑ دیے گئے، گلا دبایا گیا اور سر کے بال بھی کاٹ دیے گئے۔ واقعے کے ایک ملزم کو گرفتار کرلیا گیا ہے۔

(Visited 11 times, 1 visits today)
Loading...
Advertisements

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں