چین کورونا وائرس کی بدترین صورتحال سے باہر آگیا ہے، چین کا دعویٰ

کورونا وائرس
Loading...

چینی حکام نے ملک میں کورونا وائرس کی بدترین صورتحال سے باہر آنے کا دعویٰ کیاہے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق چین کے سینئر میڈیکل ایڈوائزر نے نیوز کانفرنس میں بتایا کہ کورونا وائرس کی عالمی وباء کے جون تک ختم ہونے کے امکانات ہیں۔

کرونا وائرس : ٹرمپ نے یورپ سے امریکا کے سفر پر پابندی عائد کر دی

وائرس کے جون تک ختم ہونے کے امکانات ہیں: چینی سینئر میڈیکل ایڈوائزر

انہوں نے کہا کہ چین میں دوسرے ممالک سے آنے والے کیسز میں سے کئی مریضوں میں وائرس کی علامات نہیں اور صحت یاب ہونے والے مریضوں میں دوبارہ انفیکشن کی شرح بھی انتہائی کم ہے۔

دوسری جانب چینی ہیلتھ کمیشن کے سربراہ کا کہنا ہےکہ چین وائرس کی بدترین صورتحال سے باہر آگیا ہے۔

واضح رہے کہ چین کے شہر ووہان سے شروع ہونے والا کورونا وائرس دنیا کے 124 ممالک میں پھیل چکا ہے اور روزانہ کسی ملک میں کیسز کی تصدیق ہورہی ہے، دنیا بھر میں وائرس سے متاثرہ افراد کی تعداد ایک لاکھ 27 ہزار سے تجاوز کرگئی ہے جب کہ 4500 سے زائد افراد ہلاک ہوئے۔

Loading...

چین میں وائرس سے اب تک مجموعی طور پر 80 ہزار سے زائد افراد متاثر ہوئے اور 3 ہزار سے زائد ہلاکتیں ہوئیں جب کہ 62 ہزار سے زائد افراد صحت یاب ہوئے۔

عالمی ادارہ صحت نے کورونا وائرس کو ایک عالمگیر وباء قرار دیا ہے لیکن اس پر قابو پانے کے لیے چین کے اقدامات کو قابل تحسین بھی قرار دیا ہے۔

دنیا کے کئی ممالک نے وائرس کے باعث سفری پابندیاں عائد کردی ہیں اور کئی کانفرنسز سمیت کھیلوں کے مقابلے بھی منسوخ کیے جاچکے ہیں۔

(Visited 68 times, 2 visits today)
Loading...
Advertisements

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں