رکن سندھ اسمبلی شہناز انصاری قاتلانہ حملے میں جاں بحق

نوشہرہ فیروز: پاکستان پیپلز پارٹی کی رکن سندھ اسمبلی شہناز انصاری قاتلانہ حملے میں جاں بحق ہو گئیں۔

پاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی) کی رکن سندھ اسمبلی شہناز انصاری پر قاتلانہ حملہ ہوا جس کے بعد وہ شدید زخمی ہو گئیں۔ انہیں تشویشناک حالت میں نوابشاہ ہسپتال منتقل کیا گیا۔ جہاں پر وہ جانبر نہ ہو سکیں۔

اطلاعات کے مطابق صوبہ سندھ کے ضلع نوشہرو فیروز میں دریا خان مری کے قریب مسلح افراد نے فائرنگ کی جس کے نتیجے میں رکن سندھ اسمبلی شہناز انصاری شدید زخمی ہوگئیں۔

ڈاکٹرز کا کہنا ہے کہ فائرنگ کے باعث پاکستان پیپلز پارٹی کی ایم پی اے شہناز انصاری کے جسم میں تین گولیاں لگیں جس کے باعث وہ جانبر نہ ہو سکیں۔

ذرائع کے مطابق قاتلانہ حملے میں جاں بحق ہونے والی ایم پی اے بہنوئی کے چالیسویں پر موجود تھی۔

کس بہانے اِن رہنماؤں کے خلاف غداری کے مقدمے بنائے جارہے ہیں؟ بلاول بھٹو زرداری

پولیس کا کہنا ہے کہ ایم پی اے کے بہنوئی کا اپنے بھائیوں کیساتھ ملکیت کا تنازعہ تھا۔

خاندانی ذرائع کا کہنا تھا کہ مرحوم بہنوئی ڈاکٹر زاہد کھوکھر کے بھائیوں نے ایم پی اے کو گاؤں آنے سے منع کر رکھا تھا۔

 واقعے کے وقت رکن سندھ اسمبلی کے ساتھ کوئی سیکورٹی گارڈ نہیں تھا اور نہ ہی پولیس موجود تھی۔

پیپلزپارٹی کی رکن اسمبلی شہلا رضا نے اے آر وائی نیوز سے بات کرتے ہوئے کہا کہ شہنازانصاری کی کسی سےذاتی دشمنی نہیں تھی وہ اپنےعلاقےمیں سوشل ورکر کے طورپرجانی جاتی تھیں۔

(Visited 13 times, 1 visits today)
loading...

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں