حاملہ خاتون سے بچے میں کرونا وائرس کیسے منتقل ہوتا ہے…. ؟

Loading...

کرونا وائرس کے پھیلنے کے بعد ماہرین کافی عرصے سے اس موضوع پر تحقیق کر رہے تھے کہ کیا حاملہ خاتون پیٹ میں موجود بچے کو وائرس منتقل کر سکتی ہے یا نہیں؟

کافی عرصے کی محنت اور مطالعے کے بعد ماہرین نے ایک سوال کا جواب حاصل کر لیا ہے. ماہرین کا کہنا ہے کہ کرونا وائرس بہت آسانی سے حاملہ خاتون اپنے رحم میں موجود بچے میں منتقل کرسکتی ہے. اور ان کا مزید یہ بھی کہنا تھا کہ کرونا کے علاوہ بھی بہت سے وائرسز ایسے ہیں جو ماں کے رحم میں موجود بچے میں منتقل ہو جاتے ہیں. ریسرچ کے اس عمل میں اٹلی کے ماہرین نے تقریبا 31 ایسی خواتین پر ریسرچ کی جنہوں نے اپریل کے مہینے میں بچے پیدا کیے تھے.

امریکن ماہرین نے کرونا وائرس کے متعلق نئی ریسرچ جاری کردی….

ماہرین نے جب ان خواتین کا جائزہ لیا تو ماں کے دودھ میں اور خون میں کرونا وائرس کی موجودگی کا انکشاف ہوا. اس کے علاوہ فرانس کے ماہرین نے بھی اس سے متعلق ریسرچ کی اور ان کی ریسرچ سے یہ بات سامنے آئی ہے رحم مادر میں بھی بچوں کو کرونا وائرس منتقل ہوتا ہے.

Loading...

حاملہ خاتون سے کرونا وائرس منتقل ہونے کے متعلق اب تک جو بھی ریسرچ کی گئی ہے ان میں ایسی خواتین شامل تھیں جو اپنے حمل کے آخری دنوں میں کرونا وائرس کا شکار ہوئی تھیں. ماہرین کا کہنا ہے کہ ہم ابھی تک کسی ایسی خاتون کا جائزہ نہیں لے سکے جو اپنے حمل کے آغاز میں ہیں کرونا وائرس کا شکار ہوئی ہو اور اس سے بچے پر کیا اثر پڑے گا؟ لیکن ہم جلد ہی اس سوال کا جواب بھی معلوم کر لیں گے

(Visited 40 times, 1 visits today)
Loading...
Advertisements

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں