ماہ رمضان میں بھی لوگ غیرضروری گھروں سے باہر نہ نکلیں، مراد علی شاہ

مراد علی شاہ

کراچی: وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے کہا ہے کہ ہم نے کورونا کے حوالے سے کافی فیصلے کیے ہیں، ہو سکتا ہے اس میں کچھ غلط ہوں۔

وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ کی زیر صدارت سکھر کمشنر آفس میں کورونا کے حوالے سے اجلاس ہوا جس میں صوبائی وزرا ناصر شاہ، امتیاز شیخ اور مکیش کمار چاولہ نے شرکت کی۔

کورونا سے نقصانات ضرور ہیں لیکن اللہ سے بہتری کی امید ہے، عبدالحفیظ شیخ

سپریم کورٹ میں تسلی بخش جواب نہ دینے پر وزیراعظم کی ظفر مرزا کی سرزنش

اس موقع پر وزیراعلیٰ سندھ  نے لاک ڈاؤن پر سختی سے عملدرآمد کی ہدایات کی۔

جہاں تک رمضان کا تعلق ہے تو 24 اپریل کو رمضان کا چاند نظر آجائے گا، فواد چوہدری

مراد علی شاہ کا کہنا تھاکہ ہم نے کورونا کے حوالے سے کافی فیصلے کیے ہیں، ہو سکتا ہے اس میں کچھ غلط ہوں، بڑی کوتاہی یہ ہوتی ہے کہ وقت پر کوئی فیصلہ نہ کیا جائے لیکن لاک ڈاون کے اثرات سے سب اچھی طرح واقف ہیں۔

ماضی میں زرعی شعبے کو نظر انداز کیا گیا، وزیراعظم عمران خان

کرونا وائرس کے باعث دنیا میں خوراک کی قلت کا خدشہ ہے، اقوام متحدہ

انہوں نے کہا کہ ایسا نہیں ہے کہ صرف بیرون ملک سے آنے والوں پرتوجہ مرکوزکررکھی ہے، ہماری پہلی ترجیح اس وقت لوگوں کی صحت ہے، ماہ رمضان میں بھی لوگ غیرضروری گھروں سے باہر نہ نکلیں۔

وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ کا کہنا تھاکہ سماجی فاصلہ بہت ضروری ہے، میری گاڑی میں بھی دو افراد تھے، عوام سے درخواست ہے کہ بلا ضرورت گھروں سے باہرنہ نکلیں۔

واضح رہے کہ سندھ میں کورونا وائرس کے کیسز 2 ہزار سے تجاوز کرگئے ہیں جب کہ ہلاکتوں کی تعداد بھی 45 تک جا پہنچی ہے۔

(Visited 19 times, 1 visits today)

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں