سینیٹ میں انسداد دہشتگردی ایکٹ ترمیمی بل 2020 مسترد

مشاہد اللہ
Loading...

اسلام آباد: سینیٹ میں انسداد دہشتگردی ایکٹ ترمیمی بل 2020 مسترد کر دیا گیا، بل کے حق میں 31 اور مخالفت میں 34 ووٹ آئے۔

سینیٹ اجلاس میں انسداد دہشتگردی ایکٹ ترمیمی بل 2020 کیلئے تحریک سینیٹر سجاد طوری کی جانب سے پیش کی گئی، ایوان کی جانب سے تحریک پیش کرنے کی منظوری دے دی گئی۔ بل کے حق میں 31 اور مخالفت میں 34 ووٹ آئے۔

اپوزیشن اراکین نے انسداد دہشتگردی ایکٹ تیسرے ترمیمی بل 2020 پر ووٹنگ کا مطالبہ کیا، چیئرمین سینیٹ صادق سنجرانی نے بل کی منظوری کے لیے ووٹنگ شروع کرائی۔ سینیٹ کا اجلاس جمعہ کی صبح ساڑھے 10 بجے تک ملتوی کر دیا گیا۔

تاہم سینیٹ میں ایف اے ٹی ایف سے متعلق ایک اور کوآپریٹو سوسائٹی بل پیش کیا گیا جسے منظور کرلیا گیا جب کہ جماعت اسلامی نے اس بل کی مخالفت میں ووٹ دیا۔

Loading...

پولیس قبضہ گروپ بن جائے گی تو موٹروے جیسے واقعات ہوتے رہیں گے، لاہور ہائیکورٹ

واضح رہے کہ گزشتہ روز قومی اسمبلی نے فنانشل ایکشن ٹاسک فورس (ایف اے ٹی ایف) سے متعلقہ تیسرا انسداد دہشت گردی ترمیمی بل 2020 کثرت رائے سے منظور کیا تھا۔

انسداد دہشت گردی تیسرے ترمیمی بل 2020 کے مطابق تفتیشی افسر عدالت کی اجازت سے 60 دن میں بعض تکنیکس استعمال کر کے دہشت گردی میں رقوم کی فراہمی کا سراغ لگائے گا، ان تکنیکس میں خفیہ آپریشنز، مواصلات کا سراغ لگانا اور کمپیوٹر سسٹم کا جائزہ لینا شامل ہے۔

(Visited 11 times, 1 visits today)
Loading...
Advertisements

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں