کشمیر میں پیلٹ گنز کا استعمال ہورہا ہے، بھارتی فوج کے سربراہ کا اعتراف

کشمیر

نئی دہلی: بھارت کے سابق چیف آف آرمی اسٹاف اور موجودہ چیف آف ڈیفنس اسٹاف (سی ڈی ایس) جنرل بپن راوت نے انکشاف کیا ہے کہ مقبوضہ کشمیر میں پیلٹ گنز کا استعمال ہورہا ہے۔

رپورٹ کے مطابق انسداد دہشت گردی کے پینل سے گفتگو کرتے ہوئے جنرل بپن راوت کا کہنا تھا کہ ’پیلٹ گن غیرمہلک ہتھیار ہے جو اب مقبوضہ کشمیر میں شاذ نادر ہی استعمال ہورہی ہے‘۔

انہوں نے پیلٹ گنز کے استعمال کی وجہ کشمیر کے حریت پسندوں کو قرار دیا اور کہا کہ جب دوسری طرف سے نعرے لگیں یا پتھراؤ ہو تو فوجی مجبوراً گن چلاتا ہے۔

مسئلہ کشمیر پر سلامتی کونسل کا بند کمرہ اجلاس، صورت حال پر غور

بھارت کے چیف آف ڈیفنس اسٹاف نے مزید کہا کہ ‘پیلٹ گنز سے مقبوضہ کشمیر کے نوجوان مظاہرین کے صرف پیروں کو نشانہ بنایا جاتا ہے’۔

واضح رہے کہ مقبوضہ کشمیر میں تعینات بھارتی فوجی کشمیریوں کے مظاہروں کو منتشر کرنے کے لیے پیلٹ گنز کا استعمال کرتی ہے، جن کے چھرے لگنے سے اب تک متعدد نوجوانوں اور بچوں کی آنکھیں ضائع ہوچکی ہیں۔

(Visited 16 times, 1 visits today)
loading...

Comments

comments

کشمیر,

اپنا تبصرہ بھیجیں