نئی دہلی: بھارتی جوان نے ایسا کیا کر دیا جس کی وجہ سے عالمی میڈیا کی نظر میں جگہ بن گئی

بھارتی

نئی دہلی: بھارتی میڈیا نے ایک بار پھر انوکھا دعوی کر دیا ہے کہ ان کے ملک کے جوان نے عالمی شہرت یافتہ ایتھلیٹ یوسین بولٹ کا تیز دوڑنے کا ریکارڈ توڑ دیا ہے۔اور اب یہ ریکارڈ ان کے پاس آ گیا ہے

بھارتی ریاست کرناٹک سے تعلق رکھنے والے 28 سالہ مزدور سری نواسا نے روایتی کمبالا نامی علاقائی ریس میں حصہ لیا جس میں شامل افراد، چاول کے کھیت میں 2 بھینسوں کو پکڑ کر 100 میٹر تک دوڑ لگاتے ہیں۔

بھارتی میڈیا کا کہنا ہے کہ اس شخص نے یہ فاصلہ 9.55 سیکنڈز میں طے کر کے معروف جمیکن ایتھلیٹ یوسین بولٹ کا ریکارڈ توڑ دیا ہے جو یہ فاصلہ 9.58 سیکنڈز میں طے کرچکے ہیں۔

جیسے ہی اس ریس کی ویڈیو سوشل میڈیا پر آئی، بھارتی میڈیا نے اس مزدور کو یوسین بولٹ کا ہم پلہ قرار دینا شروع کردیا، یہ نظر انداز کر کے اس شخص نے بھینسوں کی مدد سے یہ ریس جیتی، تو کمال بھینسوں کا ہوا، اس شخص کا نہیں۔

بھارتیہ جنتا پارٹی کے ایک معروف رہنما مرلی دھر راؤ نے اپنے ٹویٹر پر ویڈیو پوسٹ کرتے ہوئے کہا کہ ملک کے معروف ٹرینرز کو اس شخص کی تربیت کرنی چاہیئے۔

ان کے اس ٹویٹ پر ریاستی وزیر کھیل کرن رجیجو نے جواب دیا کہ اسپورٹس اتھارٹی آف انڈیا کے حکام نے اس شخص سے رابطہ کرلیا ہے، سری نواسا پیر کے روز مرکزی اسپورٹس سینٹر پہنچ جائے گا اور میں یقینی بناؤں گا کہ ملک کے چوٹی کے ٹرینرز اس کی تربیت کریں۔

loading...

سری نواسا کے اس کارنامے کے بعد جب متعدد ٹی وی چینلز نے اس کا انٹرویو کیا تو اس نے بتایا کہ اسے بچپن سے اس ریس میں حصہ لینے کا شوق تھا اور وہ گزشتہ 7 برس سے اس کھیل میں حصہ لے رہا ہے۔

دوسری جانب دیوانے ہوئے بھارتی میڈیا کو کھیلوں کی گورننگ باڈی نے تنبیہہ کردی کہ وہ اس بھارتی شخص کے عالمی شہرت یافتہ ایتھلیٹ سے موازنے سے گریز کریں۔

گورننگ باڈی کا کہنا ہے کہ اولمپک انتظامیہ کے پاس رفتار جانچنے کے لیے سائنسی طریقے اور بہتر آلات موجود ہیں۔

خیال رہے کہ افریقی ملک جمیکا کے ایتھلیٹ یوسین بولٹ کو دنیا کا تیز ترین انسان قرار دیا جاتا ہے۔ بے شمار ریکارڈز رکھنے والے بولٹ کی اوسط رفتار 23 میل فی گھنٹہ ہے جبکہ زیادہ سے زیادہ رفتار 27 میل فی گھنٹہ ہے۔

(Visited 31 times, 1 visits today)

Comments

comments

افریقی ملک, بھارتی, مزدور, نئی دہلی, یوسین بولٹ,

اپنا تبصرہ بھیجیں