مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج نے مزید 3 کشمیریوں کو شہید کردیا

مقبوضہ

سری نگر: مقبوضہ کشمیر میں بھارت کے مظالم جاری ہیں، قابض فوج نے ضلع پلوامہ میں 3 نوجوانوں کو شہید کر دیا۔

بھارتی ریاستی دہشتگردی کے خلاف کشمیری عوام نے بھرپور احتجاج کرتے ہوئے بھارتی فوج پر شدید پتھراو کیا۔ مقبوضہ کشمیر میں قابض بھارتی فوج نے ضلع پلوامہ میں سرچ آپریشن کی آڑ میں مزید 3 کشمیری نوجوانوں کو شہید کردیا۔ شہید ہونے والوں میں اب تک دو نوجوانوں کی شناخت ہوگئی ہے جن میں سے ایک سید امام الدین اور دوسرا سید علی زید ہیں۔

ضلع پلوامہ کے علاقے ترال میں بھارتی فوج نے تازہ ظالمانہ کارروائی میں مزید 3 نوجوانوں کو شہید کر دیا، قابض فوج نے ضلع سری نگر، بڈگام ، اننت ناگ اسلام آباد، بارہ مولا، کپواڑہ اور راجوری میں بھی نام نہاد سرچ آپریشن کیا اور متعدد نوجوانوں کو غیر قانونی حراست میں لے لیا۔

کشمیر میں کرفیو اور لاک ڈاؤن کو 199 روز ہوگئے، متعدد نوجوان گرفتار

بھارتی مظالم کے خلاف کشمیری سڑکوں پر نکل آئے اور مودی حکومت کے خلاف بھرپور احتجاج کیا، اس دوران بھارتی فوج اور وزیراعظم مودی کے خلاف شدید نعرے بازی کی گئی جبکہ بھارتی فوج پر نوجوانوں نے پتھراو بھی کیا۔

loading...

بھارتی فورسز نے مقبوضہ وادی کو 199 روز سے دنیا کی سب سے بڑی چھاؤنی بنا رکھا ہے،

نہتے کشمیری نوجوانوں کی جبری گرفتاریاں اور ان پر بہیمانہ تشدد کا سلسلہ تاحال جاری ہے۔ تفصیلات کے مطابق مقبوضہ کشمیر میں مسلسل لاک ڈاؤن اور کرفیو کو 199 دن ہوگئے ہیں، انٹرنیٹ اور موبائل سروس کی بندش نے مقبوضہ کشمیر کا رابطہ دنیا سے منقطع کیا ہوا ہے۔

کشمیر میڈیا سروس کے مطابق بھارتی فوج نے گھرگھر تلاشی لے کر متعدد نوجوانوں کو گرفتار کرلیا، لوگوں کو بیمار حریت رہنما علی گیلانی سے ملاقات سے روک دیا گیا، علی گیلانی کے گھر پر اضافی فورسز اہلکار تعینات کردئیے گئے، علی گیلانی طویل عرصے سے گھر میں نظربند ہیں۔

(Visited 28 times, 1 visits today)

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں