پاکستان کے بلیک لسٹ ہونے کے تمام خدشات ٹل گئے

اسلام آباد : پیرس میں ایف اے ٹی ایف کے اجلاس میں پاکستان کے بلیک لسٹ ہونے کے تمام خدشات ختم ہوگئے، رکن ملکوں نے پاکستان کی کارکردگی کو قابل ستائش قرار دے دیا۔

ذرائع کے مطابق بھارت پاکستان کو بلیک لسٹ میں دھکیل نہیں سکتا، پاکستان کو بلیک لسٹ سے بچنے کے لیے مطلوبہ حمایت حاصل ہے، پاکستان کو ترکی، چین، ملائیشیا، سنگاپور، ہالینڈ، ہانگ کانگ، کینیڈا، امریکا، فرانس، جاپان، سعودی عرب اور برطانیہ کی حمایت مل گئی ہے۔

تفصیلات کے مطابق پیرس میں ایف اے ٹی ایف کا اجلاس جاری ہے، پاکستان پر بلیک لسٹ کے تمام خدشات دور ہوگئے ، رکن ممالک نےپاکستان کی کارکردگی کوقابل ستائش قرار دے دیا۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ بھارت پاکستان کو بلیک لسٹ میں دھکیل نہیں سکتا، پاکستان کوبلیک لسٹ سے بچنے کیلئے مطلوبہ حمایت حاصل ہے، گرے لسٹ سے متعلق پاکستان کیلئے فی الحال ووٹنگ نہیں ہوگی، ایف اے ٹی ایف کی گرے لسٹ 2سال میں ختم ہوتی ہے۔

ذرائع کے مطابق پاکستان کو 27اہداف پر اکتوبر 2020تک عملدرآمدکرناہے، پاکستان نے27میں سے 14اہداف پر واضح پیش رفت کی، نیکٹا اور صوبائی سطح پرفلاحی تنظیموں کی چانچ پڑتال مکمل کی جائے گی۔

پاکستان ایف اے ٹی ایف کی گرے لسٹ میں رہے گا یا نہیں؟ فیصلہ…

ذرائع کا کہنا ہے کہ ایف اے ٹی ایف اسٹیٹ بینک،ایس ای سی پی،ایف بی آر ،ایف ایم یو سے خوش ہیں اور نیکٹا کی کارکردگی پر اطمینان کا اظہار کیا جبکہ پاکستان نے ڈالر کی اسمگلنگ کی روک تھام کیلئے مناسب قانونی سازی کی۔

ذرائع کے مطابق پاکستان کو ترکی، چین اور ملائیشیا سمیت دوست ممالک کی حمایت حاصل ہیں جبکہ سنگاپور، ہالینڈ، ہانگ کانگ، کینیڈا ،امریکا نے پاکستانی اقدامات کی تعریف کی اور فرانس، جاپان،سعودی عرب، برطانیہ نے بھی پاکستان کی حوصلہ افزائی کی ہے۔

پاکستان بیشتر سفارشات پر عملدرآمد مکمل کرچکا ہے، 27 اہداف کے حصول پر کوششیں جاری رکھےگا

(Visited 23 times, 1 visits today)
loading...

Comments

comments

بلیک لسٹ, پاکستان,

اپنا تبصرہ بھیجیں