لوٹا مال وصول کرکے خزانے میں جمع کرایا جا رہا ہے، شہزاد اکبر

Loading...

لاہور: مشیر داخلہ شہزاد اکبر نے کہا ہے کہ یہ تاثر بے بنیاد ہے کہ ملک میں صرف اپوزیشن سے تعلق رکھنے والے لوگوں کا احتساب ہو رہا ہے، شوگر انکوائری میں شامل افراد کا تعلق تمام جماعتوں سے ہے۔

وزیر اعظم عمران خان کی افغان صدر سے ملاقات، افغان مفاہمتی عمل پر بات چیت

لاہور میں وزیراعلیٰ پنجاب کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ سرکاری زمینوں پر بااثر افراد نے قبضے کر رکھے تھے۔ قبضہ مافیا اسی سیسلین مافیا کا حصہ ہے جس کا ذکر سپریم کورٹ نے کیا تھا۔

شہزاد اکبر نے کہا کہ ہمارے دور میں 532 فیصد ریکوری میں اضافہ ہوا۔ قبضہ مافیا سے 181 ارب کی اراضی واگزار کرائی گئی۔ لوٹا مال وصول کرکے خزانے میں جمع کرایا جا رہا ہے۔ وفاق کی طرح پنجاب میں بھی کسی کو این آر او نہیں ملے گا۔ سرکاری زمینوں پر بااثر افراد نے قبضے کر رکھے تھے۔

Loading...

ان کا کہنا تھا کہ ملکی وسائل لوٹنے والوں سے وصولیاں کرکے قومی خزانے میں جمع کرائیں گے۔ یہ تاثر غلط ہے کہ صرف اپوزیشن کا احتساب ہو رہا ہے۔ ایک جماعت کو ٹارگٹ کرنے کا تاثر بھی غلط ہے۔ شوگر انکوائری میں لوگوں کا تعلق تمام جماعتوں سے ہے۔

انہون نے کہا کہ نواز شریف کے باہر جانے کے فیصلے پر ہم نے شورٹی بانڈ مانگا تھا۔ برطانوی حکومت سے نواز شریف کو ڈی پورٹ کرنے کا مطالبہ کر چکے ہیں۔ نواز شریف کا کیس دیگر ملزمان سے مختلف ہے۔

(Visited 34 times, 1 visits today)
Loading...
Advertisements

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں